نقیب قتل کیس: روپوش ایس ایس پی راؤ انوار کی گرفتاری کے لیے ٹیم تشکیل دے دی گئی

راؤ انوار

نقیب اللہ قتل کیس میں سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار او ان کی ٹیم کے روپوش ہونے کے بعد گرفتاری کے لیے خصوصی ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں

نقیب اللہ قتل کیس میں روپوش سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار اوران کی ٹیم کی گرفتاری کے لیے خصوصی ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں۔ ان ٹیموں نے کچھ مقامات پر چھاپے بھی مارے لیکن اب تک کوئی قابل ذکرکامیابی حاصل نہیں ہوسکی۔ سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار تاحال روپوش ہیں۔ وہ اور ان کی ٹیم کے اہلکاروں کے موبائل فونزبند ہیں جس کی وجہ  فون ٹریس کر کے بھی ان کی موجودگی کے مقام کی نشاندہی میں ناکامی ہو رہی ہے۔

دوسری جانب نقیب اللہ کیس میں 4 پولیس اہلکاروں کو حراست میں لے لیا گیا ہے تاہم ان کی گرفتاری بھی ظاہر نہیں کی گئی، اس کے علاوہ ایس ایس پی ملیر عدیل چانڈیو نے راؤ انوار کے ساتھ کام کرنے والے 17 تھانوں کے ہیڈ محرر کو کام کرنے سے روک دیا ہے اور ان کی جگہ دیگر اہلکاروں کو ہیڈ محرر کا عارضی چارج دے دیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ کچھ روز پہلے ایس ایس پی ملیز راو انوار نے ایک پولیس مقابلے میں چند دہشت گردوں کو مارنے کا دعویٰ کیا تھا۔ جس میں نقیب اللہ محسود بھی شامل تھا۔ تاہم بعد میں پولیس مقابلہ جعلی ثابت ہوا۔ پولیس مقابلے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم نے ایس ایس پی راؤ انوار کو معطل کرنے کی سفارش کی تھی۔ اور راؤ انوار کو ٹیم کے سامنے پیش ہونے کا نوٹس جاری کیا گیا تھا۔ لیکن راؤ انوار پیش نہیں ہوئے اور اس دن سے روپوش ہیں۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں