مردان: 4 سالہ عاصمہ کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی، ڈی این اے رپورٹ

13 سالہ طیبہ کو بھائی نے زیادتی کر کے قتل کر دیا
loading...

مردان: 15 جنوری کو قتل کی جانے والی 4 سالہ عاصمہ کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی، ڈی این اے رپورٹ

15 جنوری کو مردان میں 4 سالہ عاصمہ کو زیادتی کر کے قتل کیا گیا تھا۔ ڈین اے رپورٹ سے ثابت ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق 15 جنوری کو مردان میں کھیتوں سے ملنے والی عاصمہ کی لاش پر دو طرح کے موقف سامنے آئے تھے۔ ضلعی ناظم نے دعویٰ کیا تھا کہ عاصمہ کے ساتھ زیادتی کی گئی ہے۔ جبکہ ڈسٹرکٹ پولیس افسر نے دعویٰ کیا تھا کہ عاصمہ کی موت گھنٹنے سے ہوئی اور پوسٹ مارٹم میں جنسی زیادتی کے حوالے سے کوئی ثبوت نہیں ملا۔

لیکن اب ڈی جی فرانزک سائنس ایجنسی پنجاب کے مطابق ڈی این اے رپورٹ سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ 4 سالہ عاصمہ کے ساتھ جنسی زیادتی کے بعد قتل کیا گیا۔

یاد رہے کہ مردان میں 15 جنوری کو 4 سالہ عاصمہ کی لاش کھیتوں سے ملی تھی۔ عاصمہ چند پہلے سے لاپتہ تھی۔ اس حوالے سے خیبرپختون خواہ پولیس نے ڈی این اے کے  لیے 200 لوگوں کے نمونے بھی لے لیے ہیں۔ پولیس کے مطابق عاصمہ کی ڈٰی این اے رپورٹ آںے کے بعد مزید کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں