فلم ‘پدماوت’ کے ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی کا سرقلم کرنے والے کو 51 لاکھ روپے دیے جائیں گے۔

سجنے لیلا بھنسالی کا سرقلم کرنے والے کو 51 لاکھ روپے دیے جائیں گے

فلم ‘پدماوت’ کے ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی کا سرقلم کرنے والے کو 51 لاکھ روپے دیے جائیں گے۔ وائس پریزیڈنٹ براجمنڈل کشتریا راجپوت مہاسبھا

فلم ‘پدماوت’ کے ہدایت کار سجنے لیلا بھنسالی کا سرقلم کرنے والے کو 51 لاکھ روپے دیے جائیں گے۔ ہدایت کار سنجے لیلابھنسالی کی ہدایت کاری میں بننےوالی فلم ‘پدماوت’ ریلیز سے پہلے ہی تنازعات کا شکار ہوگی تھی۔  اور ہندو انتہاپسند تنظیم نے فلم پر پابندعائد کرنے کا مطالبہ کیاتھا۔ اور سنجے لیلا کا سر کاٹنے والے کے لیے انعامی رقم کا اعلان بھی کیا تھا۔ بھارتی سینسربورڈ کے حکم پرفلم کا نام پدماوتی سے پدماوت کرنے کے باوجود  فلم گزشتہ برس ریلیز نہیں ہو پائی تھی۔  تاہم انڈین سپریم کورٹ نے فلم کو اس 25 جنوری کو  ریلیز کرنے کی اجازت دے دی تھی۔  سپریم کورٹ کی مداخلت کے باوجود فلم کےخلاف پرتشدد مظاہرے جاری رہے۔

loading...

بھارتی میڈیا کے مطابق   اب ایک بار پھر سے   انتہا پسند تنظیم براجمنڈل کشتریا راجپوت مہاسبھا کے وائس پریزیڈنٹ دیواکرسنگھ نے اعلان کیا ہے کہ جو شخص سنجے لیلا بھنسالی کا سر قلم کرکے لائے گا اسے فوری طورپر51 لاکھ روپے دئیے جائیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم اس طرح ان تمام سیاستدانوں کو سبق دینا چاہتے ہیں جو اس مسئلے پر خاموش ہیں اور اس تحریک میں ہمارا ساتھ نہیں دے رہے۔

یاد رہے کہ فلم پدماوت کو 25 جنوری کو ریلیز کر دیا گیاتھا۔  اور لوگوں کی ایک بڑی تعداد فلم دیکھنے سنیما گھروں کا رخ کر رہی ہے۔ اور تجزیہ نگاروں کی طرف سے فلم کو سراہا جا رہا ہے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں