پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج موٹاپے کا عالمی دن منایا جارہا ہے

موٹاپے

دنیا بھر میں آج انسداد موٹاپے کا عالمی دن منایا جارہا ہے۔ موٹاپا بے شمار خطرناک بیماریوں جیسے امراض قلب، ذیابیطس اور کینسر کا سبب بن سکتا ہے۔

عالمی ادارہ صحت کے مطابق دنیا بھر میں اس وقت 64 کروڑ بالغ افراد اور 11 کروڑ بچے موٹاپے کا شکار ہیں جس کے باعث وہ کئی بیماریوں بشمول کینسر کے خطرے کی براہ راست زد میں ہیں۔

طبی ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ امریکہ موٹاپے کی طرف جانیوالے ممالک کی فہرست میں پہلے نمبر پر ہے جبکہ پاکستان میں یہ شرح بتدریج بڑھ رہی ہے جو کہ خطرناک علامت ہے ، شوگر، ہائی بلڈ پریشر اور ہارٹ اٹیک کی بنیادی وجہ موٹاپے ہے۔

موٹاپے سے نجات حاصل کرنے کے لیے انسان کو خوراک میں اعتدال اور مرغن غذاﺅں سے پرہیز کرکے روزانہ ایک گھنٹہ ضرور واک کرنی چاہئے۔ یہ بات طبی ماہرین نے پاکستان اوبیسٹی سوسائٹی اور ادویہ ساز ادارے فارمیوو کے زیر اہتمام پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

ڈاﺅ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر پروفیسر مسعود حمید خان نے کہا ہے کہ دنیا کی ڈیڑھ ارب آبادی موٹاپا کا شکار ہے ، موٹاپا شخصیت اور خوداعتمادی کو ہی مجروح نہیں کرتا بلکہ صحت کے لئے بھی مضر ہے ۔

Spread the love
  • 3
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں