لیڈی ہیلتھ ورکرز کا پنجاب اسمبلی کے سامنے اپنے مطالبات کے حق میں احتجاجی دھرنا رات گئے تک جاری رہا

لیڈی ہیلتھ ورکرز

لیڈی ہیلتھ ورکرزکے احتجاج سے راستہ بند ہونے سے مال روڈ ،ملحقہ شاہراؤں پر ٹریفک کا نظام بری طرح متاثر ،گاڑیوں کی قطاریں ،شہریوں کو شدید مشکلات

لاہور : صوبہ بھر سے لیڈی ہیلتھ ورکرز نے اپنے مطالبات کے حق میں رات گئے تک پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنا دیکر مال روڈ کو ٹریفک کیلئے بند کر دیا ، مظاہرین کی جانب سے اپنے مطالبات کے حق میں شدید نعرے بازی کی گئی ، راستہ بند ہونے سے مال روڈ اور ملحقہ شاہراؤں پر ٹریفک کا نظام بری طرح متاثر ہوا اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگنے سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

 تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز لاہور ، ملتان ،چینیوٹ ، نارووال ، گجرات سمیت پنجاب کے دیگر اضلاع سے آئی خواتین ہیلتھ ورکرز نے مال روڈ پر پنجاب اسمبلی کے سامنے اپنے مطالبات کے حق میں دھرنا دیاجو رات گئے تک جاری رہا ۔

لیڈی ہیلتھ ورکرز

loading...

لیڈی ہیلتھ ورکرز کا کہنا ہے کہ مطالبات کی منظوری کے لئے کئی بار حکام کو درخواستیں دیں مگر کوئی سنوائی نہ ہوئی جس کے بعد اپنا گھر اور بچوں کو چھوڑ کر کڑی دھوپ میں سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوئے ہیں ۔

لیڈی ہیلتھ ورکرزنے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ پے سکیل اپ گریڈ کیا جائے ، ہمارے بقایا جات ادا کیے جائیں اور سروس سٹرکچر بھی دیا جائے ۔ خواتین کا کہنا تھا کہ ریٹائرڈ افسروں کو ہمارے سروں پر بٹھا کر رکھا ہے جو بس حکم چلاکر ہم سے کام کرواتے ہیں اور خود کام نہیں کرتے۔

 اس کے ساتھ ہم سے ڈینگی مہم کا بھی کام لیا جاتا ہے لیکن اس کی اجرت نہیں دی جاتی ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک ہمارے مطالبات پورے نہیں ہوتے ہمارا احتجاج جاری رہے گا ۔

 احتجاج کے باعث مال روڈ بند ہونے سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا اور مال روڈ سمیت ملحقہ شاہراؤں پر بھی ٹریفک کا شدید دباؤ رہا جس کے باعث گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی رہیں اور شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں