کرکٹ میرے خون میں بسی ہے،کامران اکمل

پی ایس ایل میں زخمی ہونے کے باجود کھیلا ، بیٹنگ میں پرفارمنس سب کے سامنے،کوئی نہیں دیکھ رہا ہم کس طرح فائنل میں پہنچے :گفتگو
لاہور:قومی کرکٹ ٹیم کے سابق وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل نے کہا ہے کہ کرکٹ ان کے خون میں بسی ہے اور جب تک وہ فٹ ہیں اور پرفارمنس دے رہے ہیں ،کرکٹ کھیلتے رہیں گے۔اپنے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہاکہ وہ بیٹنگ میں اپنی بھرپور پرفارمنس دے رہے ہیں اور نتیجہ اللہ کی ذات پر چھوڑ دیا ہے۔قومی ٹیم میں منتخب کرنا سلیکٹرز کا کام ہے ،میرا کام پرفامنس دینا ہے اور وہ میں دے رہا ہوں۔انہوں نے کہاکہ پی ایس ایل میں زخمی ہونے کے باجود کھیلا اور بیٹنگ میں میری پرفارمنس سب کے سامنے ہے۔پی ایس ایل کے فائنل میں کیچ چھوڑنے کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ’بولنا بڑا آسان ہوتا ہے، مجھے پتا ہے کہ میں اپنی انجری کے ساتھ کس طرح کھیلا‘کامران اکمل نے مزید کہا کہ تنقید کرنے والوں کو ساری صورتحال کا علم ہونا چاہیے، لوگوں کو یہ بھی دیکھنا چاہیے کہ میں نے ٹیم کے لیے کیا کچھ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سب کو فائنل نظر آرہا ہے کوئی یہ نہیں دیکھ رہا کہ ہم کس طرح فائنل میں پہنچے ہیں، میں نے پورا ٹورنامنٹ انجری اور سخت تکلیف برداشت کر کے کھیلا۔خیال رہے کہ پی ایس ایل فائنل کے انتہائی اہم موڑ پر کامران اکمل نے اسلام آباد یونائیٹڈ کے بیٹسمین آصف علی کا کیچ ڈراپ کردیا تھا جس کے بعد انہوں نے حسن علی کو لگاتار تین چھکے لگاکر اپنی ٹیم کو فتح کے قریب پہنچادیا۔آصف علی کا کیچ ڈراپ کرنے پر سوشل میڈیا پر کامران اکمل کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں