ٹرمپ کی امیگریشن پالیسیوں کے خلاف وائٹ ہاؤس کے باہر مظاہرہ کیا گیا

ٹرمپ کی امیگریشن پالیسیوں کے خلاف مظاہرہ،مواخذے کا مطالبہ
وائٹ ہاؤس کے باہر مظاہرین کی جانب سے نماز ظہر کی ادائیگی،واشنگٹن میں ہی ٹرمپ کی ہیلتھ پالیسیوں کے خلاف بھی مظاہرہ
واشنگٹن :امریکی صدر ٹرمپ کی امیگریشن پالیسیوں کے خلاف وائٹ ہاؤس کے باہر مظاہرہ کیا گیا، اس موقع پر مظاہرین نے وائٹ ہاوس کے باہر نماز ظہر بھی ادا کی مطالبہ کیاہے کہ صدر ٹرمپ کی پالیسیاں لوگوں کو تقسیم کرنے والی ہیں، ٹرمپ کی جانب سے افریقی ممالک کے لیے بے ہودہ الفاظ استعمال کرنے کی بھی مذمت کرتے ہیں ،اس موقع پر مظاہرے میں شریک مسلم شرکاء نے باجماعت نماز ظہر بھی ادا کی۔امریکی ٹی وی کے مطابق مسلم اکثریتی ملکوں کے شہریوں کی امریکا آمد روکنے کے حکم نامے کا سال مکمل ہونے پر وائٹ ہاؤس کے سامنے احتجاج کیا گیا۔ واشنگٹن میں ہی سیکڑوں افراد نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی امیگریشن اور ہیلتھ پالیسیوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین صدر ٹرمپ کے مواخذے کا مطالبہ بھی کررہے تھے۔مظاہرے میں شریک افراد کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ کی پالیسیاں لوگوں کو تقسیم کرنے والی ہیں۔ انہوں نے صدر ٹرمپ کی جانب سے افریقی ممالک کے لیے بے ہودہ الفاظ استعمال کرنے کی بھی مذمت کی۔مظاہرے میں شریک مسلم شرکاء نے باجماعت نماز ظہر بھی ادا کی۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں