ایسی عادات جو بڑھتی عمر کے ساتھ چھوڑ دینی چاہیئں

عادات
loading...

 چھٹی کے انتظار میں رہنا

عادات
Getty Images

ایسی عادات جو ہمیں بڑھتی عمر کے ساتھ چھوڑ دینی چاہیے اس میں سب سے ہے کام سے فرار۔ ہم میں سے جو لوگ جاب  کرتے ہیں جو پڑھ رہے ہیں انہیں چھٹی کےدنوں یعنی ہفتہ اتوار کا انتظار رہتا ہے۔  چھٹی کے دنوں کا آرام کی غرض سے انتظار کوئی بری بات نہیں ہے۔ لیکن جب لوگ محض ہفتہ اتوار کو ذہن میں رکھ کر اپنی بہت ساری چیزوں کی منصوبہ بندی شروع کر دیتے ہیں تو مسائل پیدا ہوتے ہیں۔  مثلاَ کچھ لوگ چھٹی کے دن صرف آرام کرنا ہی پسند کرتے ہیں اور اگر انہیں اس دن کچھ اور کام کرنا پڑ جائے تو انکے لیے ایک مصیبت بن جاتی ہے۔

ہمیں چھٹی کو لے کر اپنے رویے کو لچکدار رکھنا چاہیے اور چھٹی والے دن بھی ایسا کام کرنا چاہیے جو آپ کے لیے فائدہ مند ہو جو آپ کی زندگی کو بہتر بنانے میں کام آئے۔  اس لیے 30 سال کا ہونے تک آپ کو چھٹی والے دن بھی ایک ایسی عادت اپنانی چاہیے  جو مستقبل میں آپ کے لیے پیداواری ہو۔

فیشن کے مطابق خریداری کرنا

اچھے کپڑے پہننا، اچھا دکھنا ہم سب کو ہی اچھا لگتا ہے۔ ہم اچھے کپڑے خریدنے کے لیے خرچ کرتے ہیں، لیکن یہ اس وقت تک ٹھیک ہے جب تک آپ فیشن کے پیچھے نہیں بھاگتے ہیں۔  فیشن روز بروز بدل رہا ہوتا ہے اور جب آپ فیشن کے مطابق خریداری شروع کر دیتے ہیں تو اخراجات  بڑھ جاتے ہیں۔ عمر بڑھنے کے ساتھ آپ کو اس عادت کو چھوڑنا چاہیے اور ایسی چیزوں پر خرچ کریں جنہیں آپ زیادہ دیر تک استعمال کرسکتے ہیں۔ اور بچ جانے والی رقم کو کسی پیداوری کام میں لگایں۔

مزید پڑھیں۔  روس؛ماسکو کی آتش بازی نے سب کو حیران کردیا

سگریٹ نوشی

اگر آپ صحت مند زندگی اور خوشیوں سے بھر پور زندگی گزارنا چاہتے ہیں تو سگریٹ نوشی ترک کر دیں۔ کیوں کہ جیسے جیسے عمر بڑھتی ہے آپ کی بیماریوں کے خلاف قوت مدافعت کم ہونا شروع ہو جاتی ہے۔ اس لیے بڑھتی عمر کےساتھ ایسی عادات کو چھوڑنے کی کوشش کریں۔

ایسی عادتیں جو آپ کو خوش رکھ سکتی ہیں

4۔ سونے کا وقت مقرر نہ کرنا

جب آپ جوان ہوتے ہیں تو بہت زیادہ کام کرنے سے بھی تھکاوٹ محسوس نہیں کرتے، اور زیادہ کام کرتے ہوئے کم سونا بھی زیادہ مسئلہ نہیں بنتا۔ لیکن یہ کوئی اچھی عادت نہیں ہے 7 سے 8 گھنٹے کی نیند ہمارے جسم اور صحت کے لیے ضروری ہے جو آپ کو زیادہ عرصے تک تندرست اور کام کرنے کے قابل بناتی ہے۔

لہذا اگر آپ کی سونے کی عادت ٹھیک نہیں ہے تو آپ کو اسے جلد سے جلد ٹھیک کرنا چاہیے۔

دوستوں کے ساتھ گزرے وقت کو غیر اہم سمجھنا

عادات
Getty Images

دوست زندگی میں بہت ضروری ہوتے ہیں۔ زندگی کی مشکلات میں زیادہ تر دوست ہی کام آتے ہیں۔ اس لیے اچھے دوست بنانے چاہیے۔ لیکن اگر آپ دوستوں کے ساتھ گزراے گے وقت کو غیر اہم سمجھتے ہیں تو آپ غلطی پر ہیں۔ کیوں جب آپ بوڑھے ہو جائیں گے تو دوستوں کےساتھ گزارا وقت ہی یاد آئے گا۔

لہذا اچھے دوست بنائیں اور انکے ساتھ سیر کو جائیں اور اس وقت کو اہم سمجھیں۔

لوگ کیا کہیں گے؟

ہم میں اکثر لوگ کوئی بھی کام کرتے ہوئے یہ سوچتے ہیں کہ اس کام کو دیکھ کر لوگ کیا کہیں گے، اوراس بوجھ کی وجہ سے بہت سارے کام چاہنے کے باوجود نہیں کر سکتے۔ اگر آپ بھی اس وجہ سے پریشان رہتے ہیں کہ لوگ کیا کہیں گے۔ تو ایسا سوچنا چھوڑ دیں ورنہ آپ اپنی زندگی کو مکمل طور پر انجوائے نہیں کر پائیں گے۔

مزید پڑھیں۔  یہودیوں کو اسرائیل میں رہنے کا مکمل حق حاصل ہے، سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان

اور بڑہتی ہوئی عمر کے ساتھ ذمہ داریوں میں اضافہ ہوتا اس لیے بڑھتی عمر کے ساتھ ایسی عادت سے چھٹکارا اور بھی ضروری ہو جاتا ہے۔

7۔ دماغی صحت کا خیال نہ رکھنا

اگر آپ ڈپریشن  یا سٹریس وغیرہ کو بیماری نہیں سمجھتے تو اپنی سوچ تبدیل کر لیں۔ ڈپریشن وغیرہ بھی کسی دوسری بیماری کی طرح ایک بیماری ہے۔ اس لیے ایسی کسی بیماری کے دوران ڈاکٹر سے مشورہ کرنا اپنی عادت بنائیں۔

سب سے اہم عادت جو آپ کو چھوڑ دینی چاہیے وہ یہ کہ اگر آپ زندگی میں آگے بڑھنا چاہتے ہیں ترقی کرنا چاہتے ہیں تو ان لوگوں کے ساتھ بیٹھنا اور ملنا چھوڑ دیں جو آپ کو غیر اہم سمجھتے ہیں اور اس بات کا احساس دلواتے ہیں۔

اس لیے ایسے لوگوں سے ملنا چھوڑ دیں اور ایسے لوگوں کو دوست بنائیں جو آپ ہی کی طرح ترقی کرنا چاہتے ہیں اور آپ کی اہمیت کو سمجھتے ہیں۔

Comments

comments

ایسی عادات جو بڑھتی عمر کے ساتھ چھوڑ دینی چاہیئں” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں