خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی ٹیم کی صوبہ بھر میں کاروائی,سکول و یونیورسٹیز کی کینٹین کوبھاری جارمانہ

خیبرپختونخونخوا فوڈ اتھارٹی کی کاروائی، تین سکولوں اور ایک یونیورسٹی کینٹین کو ایک لاکھ پچاس ہزار جرمانہ، دو مرغ شاپ سیل
خیبرپختو:فوڈ اتھارٹی کی کاروائی، تین سکولوں اور ایک یونیورسٹی کینٹین کو ایک لاکھ پچاس ہزار جرمانہ، دو مرغ شاپ کوسیل کردیاگیا۔
خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے صوبہ بھر میں کاروائی کرتے ہوئے تین نجی سکولوں اور ایک یونیورسٹی کینٹین کو صفائی کی ناقص صورتحال پر ایک لاکھ پچاس ہزار روپے جرمانہ کیا جبکہ دو مرغ شاپس کو صفائی کی ابتر صورتحال پر مکمل طور پر بند کردیا۔ اسکے علاوہ تعلیمی اداروں کے کینٹینوں اور بیکری شاپس کو بھی وارننگ نوٹسز جاری کردئے گئے ہیں۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر انیلا محبوب نے پشاور ورسک روڈ پر کاروائی کرتے ہوئے پشاور ماڈل سکول کے کینٹین کی ابتر صورتحال پر اسے چالیس ہزار جرمانہ کیا جبکہ سرحد یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی کینٹین کا معائنہ کرنے پر صفائی و اشیائے خورد و نوش کی ناقابل معافی صورتحال پائی گئی جس پر پچیس ہزار روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر کا کہنا تھا کہ نجی تعلیمی اداروں کی کینٹینوں میں خوراک حفظان صحت کے اصولوں کے خلاف کھلا فروخت ہوتا ہے، صفائی کا خاص انتظام موجود نہیں ہوتا جبکہ صحت کیلئے مضر کی خرید و فروخت بھی ان کے روزگار کا حصہ ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ نجی سکولوں نے کینٹینوں اور کیفی ٹیریاز کے نام پر کالا دھندہ شروع کیا ہے اور اس کا سدباب کے پی فوڈ اتھارٹی کا فرض ہے۔ انیلا محبوب کا کہنا تھا کہ تعلیمی اداروں کے کینٹینوں کی حالت کو سدھارنا ان کا مشن ہے اور اس مشن کو وہ کامیابی سے ہمکنار کرینگی۔ دوسری جانب اسسٹنٹ ڈائریکٹر سائرہ نثار نے پشاور کے پوش علاقے حیات آباد میں نجی سکولوں کی کینٹینوں کیخلاف کاروائی کرتے ہوئے ایس ٹی فرانسیس ہائی سکول اور سٹی سکول جونئیر کیمپس فیز تھری کو باالترتیب ساٹھ ہزار اور تیس ہزار روپے جرمانہ کیا۔ ان کے مطابق دوں وں سکولوں میں کینٹین اور پینے کے پانی کا ناقص انتظام موجود تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ کینٹینوں میں اشیائے خوردونوش کو صاف اور ڈھانپنے کا رواج ہی نہیں ہے۔ ان کے مطابق جہاں بہتری کی گنجائیش ہوتی ہے وہاں وارننگ نوٹسز جاری کئے جاتے ہیں لیکن کچھ کینٹینوں کی حالت دکھ کر لگتا ہے کہ خوراک کے نام پر زہر بیچ رہے ہیں۔ سائرہ نثار نے حیات آباد میں دو مرغ شاپس کو گندگی کے ڈھیر میں کام کرنے پر سیل کردیا اور تالے لگادئے۔ اس بارے ان کا موقف تھا کہ عوام کی صحت کیساتھ کھیلنے والوں کو قرار واقعی سزا اور جرمانے ملنے چاہئے تاکہ عوام کو صاف اور محفوظ خوراک کی فراہمی کو یقینی بنایا جاسکے۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں