“باہو بلی” دراصل “مولا جٹ” سے متاثر ہو کر بنائی گئی تھی، پاکستانی اداکار کا دعویٰ

مولا جٹ

کراچی: سینئر پاکستانی اداکار نے دعویٰ کیا ہے کہ ہندوستانی سنیما کی سب سے بڑی فلم دراصل مولا جٹ سے متاثر ہو کر بنائی گئی۔

تفصیلات کے مطابق معروف اداکار مصطفیٰ قریشی نے برطانوی خبر رساں ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستانی فلم میں جو مولا جٹ کا کردار تھا، وہی بھارت میں باہو بلی کا کردار تھا۔

انھوں نے کہا کہ باہوبلی میں بڑے بڑے سیٹ لگائے، فلم کا بجٹ بھی کافی زیادہ تھا، البتہ ہماری فلم غریبانہ تھی۔

مصطفیٰ قریشی نے دی لیجنڈ آف مولا جٹ کے ٹریلر پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ٹریلر سے اندازہ ہوتا ہے کہ بڑی فلم بنائی گئی ہے، بلال لاشاری سمجھ دار ڈائریکٹر اور پروڈیوسر ہیں، انھوں نے سوچ سمجھ کر ہی فلم بنائی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ہمارے پاس اتنا بجٹ نہیں تھا، ہماری مولا جٹ غریبانہ تھی، لیکن اس نے سب کو امیر کر دیا، البتہ موجودہ فلم کا بجٹ بہت زیادہ ہے۔

مزید پڑھیں: دی لیجنڈ آف مولا جٹ کا ٹریلر جاری

خیال رہے کہ مصطفیٰ قریشی نے ماضی میں بلاک بسٹر فلم مولا جٹ میں نوری نت کا یادگار کردار ادا کیا تھا، جس کے ڈائیلاگ آج بھی ناظرین کے ذہنوں میں تازہ ہیں۔

انھوں نے فلم کے ری میک، ہدایت کار بلال لاشاری اور نوری نت کا کردار ادا کرنے والے حمزہ علی عباسی کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

(Visited 2 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں