جرمنی: بجلی استعمال کریں اور پیسے کمائیں

جرمنی میں بجلی کے استعمال پر صارفین کو پیسے دیے جاتے ہیں۔
loading...

جرمنی نے رینیوایبل انرجی یعنی سولر انرجی اور ونڈ انرجی میں 200 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے

ہمارے یہاں بجلی کی لوڈشیڈنگ کےساتھ ساتھ بجلی مہنگی بھی اس قدر ہے کہ صارفین اکثر بجلی کے بلوں کو لے کر پریشان نظر آتے ہیں۔ لیکن جرمنی ایسا ملک ہے جہاں سال میں کچھ دن ایسے بھی آتے ہیں جب صارفین کو بجلی استعمال کرنے پر حکومت یا پاور سپلائی کمپنیوں کی جانب سے پیسے دیے جاتے ہیں۔

کچھ دن پہلے ایک غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی میں اس کرسمس پر لوگوں کو بجلی استعمال کرنے کی ترغیب دینے کے لیے حکومت نے پیسے دیے ہیں۔ اور ایسا تقریبا ہر سال ہوتا رہتا ہے۔

ایسا اس لیے ہے کہ جرمنی نے رینیوایبل انرجی یعنی سولر انرجی اور ونڈ انرجی میں 200 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔  اس لیے ایسے دنوں میں جب بڑٰی فیکڑیاں وغیرہ بند ہوتی ہیں یعنی کرسمس کے تہوار پر یا دیگر کسی اور تہوار پر، تب بجلی کی طلب انتہائی کم رہ جاتی ہے۔ اور اس کے ساتھ اگر ہوا تیز چل رہی ہو یا ان دنوں میں دھوپ زیادہ پڑ رہی ہو تو سولر انرجی پلانٹس اور ونڈ انرجی پلانٹس طلب سے زیادہ بجلی پیدا کر رہے ہوتے ہیں۔  اور اس اضافی انرجی کو مکمل طور پر محفوظ کرنے کے لیے کوئی ٹیکنالوجی دستیاب نہیں ہے۔ اس لیے پاور سپلائی کمپنیاں ایسے دنوں میں لوگوں کو پیسے دے کر اضافی بجلی استعمال کرنے کی ترغیب دیتی ہیں۔

لیکن یہاں نوٹ کرنے والی بات یہ ہے کہ پاور سپلائی کمپنیاں اضافی بجلی استعمال کرنے پر لوگوں کے بینک اکاونٹس میں پیسے بھیجنے کی بجائے، عام دنوں میں بجلی کے استعمال پر کم پیسے چارج کرتی ہیں۔  جس سے صارفین عام دنوں میں سستی بجلی استعمال کرتے ہیں۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں