پاکستان کی تاریخ میں بینکنگ سسٹم پر سب سے بڑا سائبر حملہ

سائبر حملہ

کراچی: پاکستان کی تاریخ میں بینکنگ سسٹم پر سب سے بڑا سائبر حملہ ہوا ہے، بینک اسلامی پر ہونے والا سائبر حملہ ملک کا سب سے بڑا حملہ قرار دیا جا رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں بینکاری نظام پر ملک کی تاریخ کا سب سے بڑا سائبر حملہ ہوا ہے، جس میں بینک کے کریڈٹ، اے ٹی ایم کارڈز سے لاکھوں ڈالر نکال لیے گئے۔

ذرائع بینکنگ نے کہا ہے کہ اس سائبر حملے کو ملکی تاریخ کا سب سے بڑا حملہ کہا جا رہا ہے، اسٹیٹ بینک نے سمندر پار ٹرانزیکشنز کے لیے عارضی پابندیاں عائد کر دی ہیں۔

اسٹیٹ بینک کی جانب سے بینکوں کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ ملک میں تمام پے منٹ کارڈز کی سیکورٹی یقینی بنانے کے لیے انتظامات کریں، اور کارڈز کے استعمال خاص طور پر بیرون ملک لین دین کی ریئل ٹائم نگرانی کی جائے

نجی بینک کے پے منٹ کارڈز کی سیکورٹی کی خلاف ورزی کا معاملہ گزشتہ روز پیش آیا تھا، اسٹیٹ بینک نے متعلقہ بینک کو خامی کی نشان دہی کی ہدایت کر دی۔

ترجمان اسٹیٹ بینک کے مطابق متاثرہ بینک کو ہدایت جاری کر دی گئی ہے کہ وہ اپنے صارفین کے لیے احتیاطی تدابیر کے حوالے سے ایڈوائزری جاری کرے۔

بینک اسلامی نے اپنا وضاحتی بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈیبٹ کارڈ کی انٹرنیشنل پیمنٹ پر غیر معمولی ادائیگی نوٹ کی، خلاف معمول ٹرانزیکشنز پر انٹرنیشنل پیمنٹ سسٹم منجمد کر دیا، غیر معمولی ٹرانزیکشنز کے دوران 26 لاکھ روپے نکالے گئے۔

بینک اسلامی کے مطابق احتیاطی طور پر اے ٹی ایم سمیت تمام ٹرانزیکشنز فوری روک دیں، غیر معمولی ٹرانزیکشنز 27 اکتوبر کو نوٹ کی گئیں، اے ٹی ایم سے کیش نکالنے کی سہولت اسی روز بحال کر دی گئی تھی، بینک کی دیگر سروسز کی بحالی کے لیے کام جاری ہے۔

Spread the love
  • 4
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں