راؤ انوار تاحال گرفتار نا ہوسکے، سپریم کورٹ کی جانب سے دی گئی مہلت ختم

راؤ انوار

نقیب اللہ قتل کیس میں مفرور سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار تاحال گرفتار نا ہو سکے، سپریم کورٹ کی جانب سے دی گئی مہلت آج ختم۔

13 جنوری کو راؤ انوار نے پولیس مقابلے میں کچھ دہشت گرد مارنے کا دعویٰ کیا تھا۔ جن میں سے ایک نقیب اللہ محسود بھی تھا۔ لیکن نقیب اللہ محسود کے اہلخانہ کے احتجاج کے بعد پولیس نے تفشیش کرتے ہوئے پولیس مقابلے کو جعلی قرار دیا تھا۔ تفشیشی ٹیم نے راؤ انوار کو عہدے سے برطرف کرنے سفارش پیش کی تھی۔  تاہم راؤ انوار کو عہدے سے برطرف کر دیا گیا تھا۔ اور انہیں تفشیشی ٹیم کے سامنے پیش ہونے کا نوٹس دیا گیا تھا۔ لیکن راؤ انوار نے ٹیم کے سامنے پیش ہونے سے انکار کردیا اور تب سے مفرور ہیں۔

loading...

سپریم کورٹ نے نقیب اللہ قتل کیس کا از خود نوٹس لیتے ہوئے ہفتے کے روز آجی جی سندھ پولیس کو عدالت طلب کیا تھا۔ جس میں آئی جی پولیس نے عدالت سے راؤانوار کو گرفتار کرنے کے لیے تین دن کی مہلت مانگی تھی۔ جو آج ختم ہو رہی ہے۔ اور راؤ انوار کو گرفتار کرنے میں پولیس تاحال ناکام ہے۔

یا د رہے کہ راؤ انوار نے گزشتہ دنوں اسلام آباد ائیر پورٹ سے دبئی فرار ہونے کی کوشش بھی کی تھی جو پولیس حکام کی جانب سے ناکام بنا دی گئی تھی۔ لیکن راو انوار کو گرفتار نہیں کیا گیا تھا۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں