سعودی عرب میں کریم اور اْوبر کی پہلی خاتون کپتانوں نے ڈرائیونگ شروع کردی

سعودی عرب میں کریم اور اْوبر کی پہلی خاتون کپتانوں نے ڈرائیونگ شروع کردی

سعودی خواتین کسی بھی شعبے میں کام کی صلاحیت کی حامل ہیں

جدہ : سعودی عرب میں خواتین کو کار چلانے کی اجازت ملنے کے بعد مقبول ٹیکسی سروس ایپلی کیشن کریم اور اْوبر کی کپتانوں نے بھی سواریوں کو ان کی جائے منزل پر پہنچانے کے لیے خدمات مہیا کرنا شروع کردیا ہے۔

عرب ٹی وی کی معلومات کےمطابق امل فرحت کو کریم کی پہلی خاتون کپتان ہونے کا اعزاز حاصل ہوا ہے ۔وہ صحتِ عامہ میں کوالٹی ایشورینس کی ڈگری کی حامل ہیں اور صحت کے شعبے میں معیار کو برقرار رکھنے سے متعلق ایک مشاورتی کمپنی چلا رہی ہیں۔

loading...

اس مصروفیت کے باوجود  امل فرحت نے کریم کے لیے ڈرائیور کے طور پر کام کا انتخاب کیا ہے اور وہ دنیا کے سامنے یہ ثابت کرنا چاہتی ہیں کہ سعودی خواتین کسی بھی شعبے میں کام کی صلاحیت کی حامل ہیں ۔

کریم کے مقابلے میں ٹیکسی خدمات پیش کرنے والی کمپنی اْوبر کے لیے اخلاص البلوشی نامی ایک خاتون نے بہ طور ڈرائیور اپنے نام کا اندراج کرایا ہے اور انھوں نے ایک مسافر خاتون کو اس کی جائے منزل پر پہنچایا اور یوں اپنا پہلا سفر مکمل کیا ۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں