‘حکومت کو کسی انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور نہ کریں’ وزیراعظم

عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے قوم سے کیے جانے والے اپنے چوتھے خطاب آسیہ بی بی کیس سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ ججز نے اآئین کے مطابق فیصلہ دیا۔

اپنے مختصر ترین خطاب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ملک میں ایک چھوٹے سے طبقے نے اپنا رد عمل دیا اور متعدد حکام کو قتل کرنے کی باتیں کیں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مدینہ کی ریاست کے بعد پاکستان وہ واحد ملک ہے جو اسلام کے نام سے بنا اور اس کا مطلب ہے کہ عدالت نے آئین کے مطابق فیصلہ دیا اور آئین قرآن اور سنت کے مطابق ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد آرمی چیف کے خلاف بغاوت کے لیے بھڑکانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کا مقصد فلاحی ریاست ہے، اگر وہ نہیں بنائیں گے تو پاکستان کا مقصد فوت ہوجاتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انسان کا ایمان مکمل نہیں جب تک رسول اللہ سے غیر مشروط محبت نہ کریں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک دشمن عناصر ججز کو قتل اور فوج سے بغاوت پر اکسا رہے ہیں، ‘میں ایسے عناصر سے درخواست کرتا ہوں کہ ریاست سے نہ ٹکرائیں، ووٹ بینک کے لیے ملک کو نقصان نہ پہنچائیں’۔

ان کا کہنا تھا کہ ایسے عناصر حکومت کو مجبور نہ کریں کہ وہ کسی انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور ہو جائے۔

Spread the love
  • 1
    Share

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں