معجزہ معراج … آپؐ کی اللہ تعالی سے ملاقات

معجزہ معراج

اسلامی سال کے ساتویں مہینے کا نام رجب ہے ۔ رجب کے مہینے کو عزت والا مہینہ مانا جاتا ہے ۔ اہل عرب اس مہینے کو اللہ تعالی کا مہینہ کہتے تھے جس کی وجہ سے اس مہینے کی عزت کرتے۔ رسولﷺ کا معجزہ معراج کا .واقعہ اسی مہینے میں پیش آیا. اس رات کو اہل ایمان شب معراج کہتے ہیں.

رجب کا مہینہ ان چار مہینوں میں سے ایک ہے جنہیں ” شہرالحرام ” کہا جاتا ہے ۔ ارشاد باری تعالی ہے
” حرمت والے چار مہینے ہیں.
1 محرم
2 رجب
3 ذی قعدہ
4 ذی الحجہ

پرانے زمانے میں لوگ ان مہینوں کا بہت احترام کیا کرتے تھے یہاں تک کہ اگر ان کے باپ دادا کے قاتل کے بارے میں بھی اس مہینے میں ان کو پتہ چل جاتا تو اس کو بھی کچھ نا کہتے ۔

• معراج کی خبر

ستائیس رجب کی شب جسے بہت ہی اہتمام اور خوبصورتی کے ساتھ منایا جاتا ہے اس کو منانے کی وجہ یہ ہے کہ اس شب کو حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کو معراج کا شرف حاصل ہوا جب حضرت جبرائیل براق لے کر نبی آپ ﷺ کی خدمت میں حاضر ہوئے اور فرمایا یا رسول اللہ آپ کا رب آپ سے ملاقات کرنا چاہتا ہے، حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم براق پر سوار ہو گئے ۔

• معراج کا سفر

اس مقدس سفر کے دوران آپﷺ مکہ سے مسجد اقصیٰ گئے اور وہاں تمام انبیائے کرام کو نماز پڑھائی پھر آپؐ کو آسمانوں میں اللہ تعالیٰ سے ملاقات کرانے کے لئے لے جایا گیا، وہاں رسول اکرمؐ کو جنت اور دوزخ بھی دکھائی گئی۔ آپؐ کی ملاقات مختلف انبیائے کرام سے بھی کرائی گئی۔

• نماز فرض ہوئی ۔

اسی سفر میں امت محمدیہ ﷺ پر نماز بھی فرض ہوئی یہی وجہ ہے کہ اس شب خصوصی عبادات کا اہتمام کیا جاتا ہے۔

شب معراج کو اہل ایمان نوافل ادا کرتے ہیں، درود و سلام اور نعت خوانی کی محفلیں سجائی جاتی ہیں، گناہوں سے بخشش اور ملکی سلامتی کے لیے رب ذوالجلال کی بارگاہ میں التجائیں کی جاتی ہیں۔

لاحاصل سے لاحاصل تک

•شب معراج کے دن کی فضیلت

اس رات کی فضیلت کا اندازہ اس بات سے خگایا جا سکتا ہے کہ حضرت ابوہریرہؓ سے روایت ہے کہ حضور اکرمؐ نے فرمایا

” جس نے 27 ویں رجب کا روزہ رکھا اس کو 60 مہینوں کے روزوں کا ثواب ہوگا ”

اور ایک مرتبہ حضور پاکؐ نے ارشاد فرمایا کہ :

” کہ رجب میں ایک رات ایسی ہے کہ اگر کوئی شخص اس رات کو اللہ کی عبادت کرتا ہے تو اس کے نامہ اعمال میں سو سا لی نیکیاں لکھ دی جاتی ہیں ۔ اور وہ رات شب معراج ہے ”

یہی وجہ ہے کہ لوگ اس شب اپنے گھروں گلی محلوں اور شہروں میں چراغاں کرتے ہیں ۔ اور روشنیاں بکھیرتے ہیں ۔ اور اس دن کو انتہائی جوش و جزبہ اور عزت و احترام سے مناتے ہیں ۔

loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں