خبردار! عید کی دعوتیں آپ کو بیمار کرسکتی ہیں

عید کے ایام مسلمانوں کے لیے اللہ تعالیٰ کا تحفہ  ہیں،  یہ دن پورے ماہ روزے رکھنے والوں کے لیے  انعام بھی ہیں۔

عید کو پیاروں اور عزیزوں سے ملنے ملانے اور ایک دوسرے کے قریب آنے کا موقع بھی سمجھا جاتا ہے اور جب مہمان گھر آئیں تو لذیذ پکوانوں سے ان کی خاطر مدارات معاشرتی روایات کا اہم حصہ سمجھی جاتی ہے۔

یہی ملنا ملانا اوردعوتیں اس وقت سخت مشکل میں مبتلا کردیتی ہیں جب میزبانوں کی میزبانی سے لطف اٹھاتے ہوئے اپنی صحت کو نظر اندازکردیا جائے اور سارا سال کھانوں میں کی جانے والی احتیاط اور پرہیز کو ایک طرف رکھ دیا جائے۔

عید کے دنوں میں مرغن اور مصالحہ دار پکوان بہت زیادہ کھانے میں آتے ہیں تو ایسے میں معدے اور پیٹ کی تکلیف میں مبتلا ہوجانا ایک عام بات ہے۔اسی صورتحال سے بچنے کے لیے ہم آپ کو کچھ مفید تجاویز بتا رہے ہیں جنہیں اپنا کر آپ کسی تکلیف میں مبتلا ہوئے بغیر دعوتیں اڑا سکتے ہیں۔

گرمی کا تدارک

مرغن اور مصالحہ دار غذائیں معدے پر بوجھ بنتی ہیں اور یہ امکان اس وقت اور بھی بڑھ جاتا ہے جب حالیہ دنوں جیسا سخت گرمیوں کا موسم ہو۔شدید گرمیوں کے موسم میں عید کے روایتی پکوان جیسے قورمہ، بریانی، کڑاہی وغیرہ میں مصالحوں اور تیل کی مقدار کم رکھی جاسکتی ہے۔

اگر آپ کے اہل خانہ کھانے کے پھیکا ہونے کی شکایت کریں تو آپ انہیں بتائیں کہ کھانے میں یہ پھیکا پن آپ نے انہیں طبیعت خرابی سے بچانے کے لیے رکھا ہے۔

پانی ساتھ رکھیں

دن کے وقت عزیز و اقارب سے ملنے کے لیے یا سیر و تفریح کے لیے نکلتے ہوئے ٹھنڈے پانی کی بوتل ضرور ساتھ رکھیں۔راستے میں آپ کو ٹریفک جام اور سخت دھوپ کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے، ایسے میں پانی کی کمی طبیعت خرابی کا باعث بن سکتی ہے۔

کسی کے گھر بھی جائیں تو پانی زیادہ سے زیادہ پئیں ، موسم کی سختی کے سبب یہ انتہائی ضروری ہے ، اپنی میزبان خواتین کو بھی تاکید کریں کہ وہ کچن میں کام کرنے کے سبب گرمی کا شکار ہوسکتی ہیں، لہذا پانی کا استعمال بڑھائیں۔

سلاد ۔ لازمی جز

اگر آپ خاتون خانہ ہیں اور اپنے گھر میں ایک شاندار سی دعوت کا اہتمام کر رہی ہیں تو  مینیو میں سلاد  ک لازمی جز کے طور پر رکھیں۔ مختلف سبزیوں پر مشتمل سلاد یقیناً کھانے کی تیزی کو کم کرنے میں مدد دے گا۔

کولڈ ڈرنک سے گریز

کولڈ ڈرنک صحت کی سب سے بڑی دشمن ہے ، اگر آپ اپنے اہل خانہ  اور مہمانوں سے پیار کرتے ہیں  تو کھانے کے ساتھ کولڈ ڈرنک رکھنے سے گریز کریں۔ اس کی جگہ فریش جوسز رکھے جاسکتے ہیں۔

اگر آپ کسی کے گھر مہمان بن کر گئے ہیں تو کھانے کے بعد کولڈ ڈرنک کی جگہ پانی پئیں۔ کولڈ ڈرنک کی جگہ ڈبے کے جوسز بھی استعمال کیے جاسکتے ہیں  جو کہ  صحت بخش تو نہیں ہوتے تاہم یہ سوڈا ڈرنک سے بہتر ہوتے ہیں۔ یاد رکھیں! کولڈ ڈرنک آپ کے معدے کو سخت نقصان پہنچانے والی شے ہے۔

پھلوں کا استعمال

دعوت میں کھانے کے بعد پھلوں سے بنا ہوا میٹھا رکھا جاسکتا ہے۔ دعوتوں کے درمیانی وقفوں میں پانی والے پھل جیسے تربوز کا بکثرت استعمال کریں۔ ہم جانتے ہیں کہ رمضان میں فروٹ چاٹ کھا کھا کر آپ کا دل بھر چکا ہوگا لیکن پھر بھی اپنی غذا میں فی الحال پھلوں کا استعمال جاری رکھیں۔

دال اور سبزی بہترین

عید کی تعطیلات میں جس دن کوئی دعوت نہ ہو اس دن کم مصالحوں کی سبزیاں یا دال چاول بنائیں۔ یہ سادہ کھانا مسلسل کھائے جانے والے مرغن کھانوں کے منفی اثرات سے نمٹنے میں مدد دے گا۔

ہوسکتا ہے آپ مسلسل دعوتوں میں مرغن کھانے کھا کر اکتا چکے ہوں ایسے میں سادہ دال چاول اور سلاد آپ کے منہ کا ذائقہ بدلنے میں مدد دے گا اور آپ اس سادے کھانے کو آج سے پہلے کبھی اتنا لذیذ محسوس نہیں کرسکے ہوں گے۔

دہی بہترین شے

عید کی تعطیلات میں گھر پر رہتے ہوئے دہی اور لسی کو اپنے کھانے کا حصہ بنا لیں۔ یہ آپ کو گرمی کے اثرات سے بچانے میں معاون ثابت ہوگا۔

ورزش کریں

دن کے آخر میں سونے سے قبل کھلی ہوا میں چند منٹ کی چہل قدمی نہایت فائدہ مند ثابت ہوگی اور آپ کے جسمانی نظام کو معمول کے مطابق رکھنے میں مدد گار ثابت ہوگی۔

(Visited 1 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں