بھارتی حکومت نوجوت سنگھ سدھو کیلئے ولن بن گئی

نوجوت سنگھ سدھو

نئی دہلی : بھارتی حکومت نوجوت سنگھ سدھو کو کرتارپور راہداری کے افتتاح میں شرکت کے لئے اجازت دینے میں پس و پیش کررہی ہے، وزیراعظم عمران خان نے نوجوت سنگھ سدھو کو افتتاحی تقریب میں شرکت کی دعوت دے رکھی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کرتار پور میں گردوارے کے فقیدالمثال افتتاح کی تیاریاں زورو شور سے جاری ہیں، بھارتی حکومت  سابق کرکٹر اور سیاست دان نوجوت سنگھ سدھو کے لئے ولن بن گئی، ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارتی حکومت کرتارپور راہداری کی افتتاحی تقریب میں شرکت کے لئے سدھو کو اجازت دینے میں پس و پیش کررہی ہے۔

افتتاحی تقریب میں شرکت کے لئے نوجوت سنگھ نے  بھارتی حکومت سے اجازت کے لئے دوسرا خط لکھا، بھارتی وزیر خارجہ سبرامنئیم جے شنکر کو ایک ہفتے میں دوسرا خط بھیجا گیا۔

خط میں کہا گیا ہے کہ گوردوارہ کرتارپور صاحب کے درشن اور افتتاحی تقریب میں شرکت کی اجازت دی جائے، کرتارپور راہداری کے ذریعے نو نومبر کو جانا چاہتا ہوں، کرتارپور سے جانے کی اجازت نہیں دی جاتی تو واہگہ سے جانے دیا جائے تاہم بھارتی حکومت نےسدھو کو تاحال کوئی جواب نہیں دیا۔

یاد رہے وزیراعظم عمران خان نے نوجوت سنگھ سدھو کو افتتاحی تقریب میں شرکت کی دعوت دی تھی ، جس پر نوجوت سنگھ سدھو نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے پاکستان آنے کی دعوت قبول کرلی تھی ، نوجوت سنگھ سدھو کا کہنا تھا کہ اس تاریخی تقریب میں مدعو کرنے پرعمران خان کا شکر گزار ہوں۔

دھوکے بازوں نے شہزادہ چارلس کو چونا کیسے لگایا ….؟

نوجوت سدھو کا مزید کہنا تھا کہ نو نومبرکی تقریب میں شرکت کی سعادت حاصل کروں گا، حلف برداری پر محبت اور مہمان نوازی کا لطف کبھی بھلا نہ پاؤں گا، کرتار پور راہداری امن و محبت کی نئی علامت اور نئے پاکستان کا تحفہ ہے۔

واضح رہے کہ حکومت پاکستان بابا گرونانک کے 550ویں یوم پیدائش کے موقع پر کرتارپور راہداری کھولنے کے لیے پُرعزم ہے، کرتارپور راہداری کی افتتاحی تقریب نو نومبر کو ہوگی ، جس میں وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ شرکت کریں گے، افتتاح کے بعد یہ پاکستان کا سب سے بڑا گردوارہ بن جائے گا۔

(Visited 15 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں