کن حالات میں روزہ ٹوٹ جاتا ہے؟

 ہم سب جانتے ہیں رمضان کریم کتنا رحمتوں اور برکتوں والا مہینہ ہے ۔

عام سے عام انسان بھی جو چاہے پورا سال عبادت نا کرتا ہو ، نمازیں نا پڑھتا ہو ، جس نے پورا سال قرآن پاک کبھی کھولا تک نا ہو وہ بھی رمضان المبارک آتے ہی سُدھرا ہوا لگتا ہے نمازیں باجماعت پڑھنے لگتا ہے ، قرآن کی تلاوت کو معمول بنا لیتا ہے ، تسبیحات پڑھتا ہے یعنی ہر طرح سے سچا اور پکا مسلمان ہونے کا ثبوت ادا کرتا ہے ۔

دراصل بات یہاں میں یہ کرنے والی ہوں کہ یہاں ہر بندے کے نظریات مختلف ہیں کچھ کیا کہتے ہیں تو کچھ کیا ۔ روزہ ٹوٹنے سے متعلق لوگوں کی مختلف اپنی اپنی رائے ہے ۔

لیکن حقیقت کیا ہے یہ جاننا سب مسلمانوں کے لیئے اشد ضروری پے . آج میں آپکو بتاوں گی کہ کن حالات میں روزہ ٹوٹ جاتا ہے اور کن حالات میں روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

تو پہلے ہم جانتے ہیں کہ کن حالات میں روزہ نہیں ٹوٹے گا ۔
1) اکثر لوگ دوران روزہ اپنا خون ٹیسٹ نہیں کرواتے بقول ان کے کہ انکا روزہ ٹوٹ جائے گا مگر یہ بات ٹھیک نہیں ہے خون ٹیسٹ کروانے سے روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

2) اکثر لوگ بیماری کے دوران انجیکشن نہیں لگواتے کہ روزہ ٹوٹ جائے گا مگر انجیکشن لگوانے سے روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

3) اسی طرح کچھ لوگ کان کے شدید درد میں مبتلا ہونے کے باوجود کان میں ڈراپس نہیں ڈالتے وہ سوچتے ہیں انکا روزہ ٹوٹ جائے گا اور درد سہتے رہتے ہیں لیکن ایئر ڈراپس سے روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

4) احتلام سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

5) حجامہ سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

loading...

6) خودبخود اگر الٹی/قے وغیرہ آ جائے تو بھی آپکا روزہ نہیں ٹوٹے گا ۔

7) گلوکوز یا ڈریپ وغیرہ لگانے سے بھی روزہ نہیں ٹوٹے گا ۔

8) اگر ہونٹ خراب ہیں تو بام یا کوئی ٹیوپ وغیرہ لگانے کی صورت میں بھی آپکا روزہ برقرار رہے گا ٹوٹے گا نہیں ۔

9) انسولین سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

10) لپ سٹک لگانے سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

11) بام لگانے سے روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

12) سرمہ لگانے سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتا ۔

رمضان المبارک میں جمعتہ المبارک اور نماز تسبیح کے فضائل اور برکات

یہ تو سمجھ آ گئی کہ روزہ کن حالات میں برقرار رہتا ہے اور ٹوٹتا نہیں ہے لیکن یہ جاننا بھی اشد ضروری ہے کہ کن وجوہات کی بنا پر روزہ ٹوٹ جاتا ہے ۔

ہم اب جانتے ہیں کہ کن حالات میں اور کن وجوہات کی بنا پر روزہ ٹوٹ جاتا ہے ۔
1) آئی ڈراپس جنہیں عام زبان میں آنکھوں کے قطرے کہا جاتا ہے آنکھوں میں قطرے ڈالنے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے ۔

2) سگریٹ اور تمباکو نوشی سے بھی روزہ ٹوٹ جاتا ہے ۔

3) ناک میں قطرے یا دوائی ڈالنے دے بھی روزہ ٹوٹ جاتا ہے ۔

4) انہیلر کا استعمال جو عام طور پر بزرگ افراد کرتے ہیں اس سے بھی روزہ ٹوٹ جاتا ہے ۔

زونیرہ شبیر

(Visited 7 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں