بھارت: حریف سیاسی جماعتوں کے درمیان کشیدگی، 4 افراد ہلاک، 18 زخمی

بھارت

نئی دہلی: بھارت میں حریف سیاسی جماعتوں کے درمیان جھگڑے اور فائرنگ کے نتیجے میں 4 افراد ہلاک جبکہ اٹھارہ زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق فائرنگ کا واقعہ مغربی بنگال کے علاقے سندیشخالی میں پیش آیا، بی جے پی کے تین کارکنوں کی ہلاکتوں کی تصدیق کردی۔

بھارت کی ریاست مغربی بنگال میں 2 حریف سیاسی جماعتوں کے درمیان کشیدگی کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے 3 اور مقامی سیاسی جماعت ترنمول کانگریس پارٹی کا ایک رکن ہلاک ہوگیا۔

پولیس اور مقامی سیاستدانوں کا کہنا تھا کہ واقعہ میں کم سے کم 18 افراد زخمی بھی ہوئے۔ خیال رہے کہ گذشتہ سال اسی ریاست میں پارلیمانی نشست پر کامیابی کے لیے وزیراعظم نریندر مودی کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جی پی) نے جارحیانہ مہم کا آغاز کیا تھا۔

پولیس حکام نے بتایا کہ مقامی جماعت کے کارکنوں کی فائرنگ سے بی جے پی کے 3 کارکن ہلاک ہوئے۔ بی جے پی کے مقامی رہنما موکول روئے نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے 3 کارکنوں کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ فائرنگ کا واقعہ مغربی بنگال کے علاقے سندیشخالی میں پیش آیا۔

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی مختصر دورے پر سری لنکا پہنچ گئے

تصادم کے نتیجے میں زخمی ہونے والوں میں دونوں جماعتون کے کارکنان شامل ہیں جنہیں قریب اسپتال میں طبی امداد فراہم کی گئی۔

خیال رہے کہ مغربی بنگال گزشتہ 2 دہائیوں سے ترینمول پارٹی کا گڑھ رہا ہے جو کہ بی جے پی کی سخت مخالف جماعت ہے، بی جے پی کی جانب سے بھی سابق وزیراعلیٰ اور پارٹی رہنما ممتا بنر جی پر سخت اور فحش تنقید کی جاتی رہی ہے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں