شمالی علاقوں میں جاڑے نے رنگ جمانا شروع کر دیا

چلاس

چلاس: شمالی علاقوں میں جاڑے نے رنگ جمانا شروع کر دیا، روئی جیسے برف کے گالوں نے ہر منظر حسین کر دیا، مانسہرہ نے بھی سفید برفیلی چادر اوڑھ لی۔

تفصیلات کے مطابق گلگت بلتستان کے ضلع دیامر کے بالائی پہاڑوں پر برفباری جاری ہے جس سے سردی کی شدت میں اضافہ ہو گیا ہے، بالائی علاقوں بابو سرٹاپ، بھٹو گاہ ٹاپ، نانگا پربت اور دیامر کے سیاحتی مقام فیئری میڈو میں بھی برف باری زوروں پر ہے، جس سے بابوسر ٹاپ اور فیئری میڈو میں درجہ حرارت منفی 6 سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے۔

ضلع دیامر کے مضافات میں بھی برف باری کے ساتھ ساتھ بارش نے لوگوں کو گھروں میں محصور کر دیا ہے۔سردی کی شیدت میں اضافہ ہو گیا

loading...

ادھر اسلام آباد میں آندھی کے بعد بارش شروع ہو گئی ہے، جس سے مارچ کے لیے سجے پنڈال میں لگے خیمے اکھڑ گئے ہیں، دھرنے کے شرکا کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، شرکا نے رات آسمان تلے گزاری، کچھ نے میٹرو اسٹیشن میں پناہ لی۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ 19 اکتوبر سے بالائی علاقوں میں موسم سرما کی پہلی برف باری شروع ہوتے ہی دیامر کے ڈی سی نے لوگوں کو نقل مکانی کی ہدایت جاری کر دی تھی۔

مانسہرہ میں برف باری کی وجہ سے بابو سرٹاپ ٹریفک کے لیے بند کرنا پڑ گیا تھا، نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے ) نے بتایا تھا کہ بابوسر ٹاپ پر 8 انچ تک برف پڑی۔

محمکہ موسمیات یہ پیش گوئی بھی کر چکا ہے کہ کراچی میں اس سال کڑاکے کی سردی پڑے گی اور نومبر کے وسط تک موسم سرد ہونے کا امکان ہے، شمال مغرب کی جانب ہوا کا دباؤ زیادہ ہے جو اچھی سردیوں کے لیے موزوں ہے۔

(Visited 10 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں