امریکہ ایران مخالف قوتوں کو جمع کرنے کی کوشش کررہا ہے، ایرانی وزیر خارجہ

امریکہ

تہران: ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا ہے کہ امریکہ کی تمام ممکنہ کوشش ہے کہ وہ ایران مخالف قوتوں کو ایک ساتھ جمع کرے۔

تفصیلات کے مطابق رواں ماہ پولینڈ میں مشرقی وسطیٰ میں امن وسلامت سے متعلق اجلاس ہونے جارہا ہے، ایران نے موقف اختیار کیا ہے کہ یہ امریکا کی ایران مخالف حکومت عملی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا تھا کہ یہ کانفرنس کامیاب نہیں ہوگی، امریکہ چاہتا ہے کہ وہ ایران مخالف ممالک کو ایک پیج پر لائے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ امریکہ جو بھی حکومت علمی تیار کرلے ناکام رہے گا، ملکی سلامتی ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔

ایرانی حکومت یہ الزام عائد کرتی رہی ہے کہ یہ کانفرنس اصل میں ایران مخالف ایجنڈے کے تحت منعقد کی جا رہی ہے، جبکہ امریکا الزام عائد کرتا ہے کہ ایرانی حکومت مشرق وسطیٰ میں عدم استحکام کی بڑی وجہ ہے۔

افغان فورسز کی فضائی کارروائی، 36 دہشت گرد ہلاک

خیال رہے کہ دو روز قبل امریکا نے ایران پر مزید دباؤ بڑھاتے ہوئے یورپی ممالک سمیت عالمی برادری سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ اس پر مزید پابندیاں عائد کریں۔

دوسری جانب ایرانی کمانڈر میجر جنرل محمد علی نے انکشاف کیا تھا کہ ایران نے ایک ہزار کلو میٹر تک مار کرنے والا نیا بیلسٹک میزائل تیار کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران اپنی دفاعی صلاحیتوں میں اضافے سے متعلق کوئی سمجھوتا نہیں کرے گا، خطے کی سلامتی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔

Spread the love
  • 4
    Shares

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں