جموں وکشمیر اور لداخ کی علیحدگی پر چین کو بھی اعتراض ہے: شاہ محمود قریشی

مظفرآباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کرفیو اور سنگینوں کے سائے میں عید منا رہے ہیں، کشمیر کے عوام بھارت کے فیصلے کو مسترد کرتے ہیں، یہ کشمیر کی آزادی کی لڑائی ہے۔

مظفر آباد کے مہاجر کیمپ میں اپنے خطاب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیراعظم کشمیریوں کا مقدمہ لڑنے ستمبر میں نیویارک جا رہے ہیں، مودی آج وہ کام کر رہے ہیں جو ہٹلر نے کیا تھا۔

کشمیر کا تنازع 3 دہائیوں سے کبھی ٹریڈ اور کبھی ایڈ کی نذر رہا، بھارت نے کشمیریوں پر عرصہ حیات تنگ کر دیا۔ لاکھوں کشمیری آزادی کیلئے قربانیاں دے رہے ہیں۔ یہ کشمیر کی آزادی کی لڑائی ہے، کشمیریوں نے بھارتی فیصلے کو مسترد کر دیا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ موجودہ حکومت ہر فورم پر کشمیر کا مقدمہ لڑ رہی ہے۔ دورہ چین کے دوران چینی وزیرخارجہ اور قیادت کے سامنے کشمیر کا مقدمہ پیش کیا، جموں و کشمیر اور لداخ کو علیحدہ کیا گیا اس پر چین کو بھی اعتراض ہے۔

چین کی رائے سے پالیسی بنانے میں مدد لیں گے جس کے بعد اقوام متحدہ کے دروازے پر دستک دیں گے۔ انھوں نے کہا کہ چین اقوام متحدہ میں کشمیر کا وکیل ہے۔

loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں