ریانا نے ڈونلڈ ٹرمپ کو امریکا کا سب سے بڑا ذہنی مریض قرار دے دیا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو متعدد شخصیات کئی بار تنقید کا نشانہ بنا چکی ہیں اور اب معروف پاپ گلوکارہ ریانا نے بھی ان پر تنقید کے تیر برسا دیے۔

ووگ میگزین کو دیے ایک انٹرویو میں ریانا نے ڈونلڈ ٹرمپ کو امریکا کا سب سے بڑا ذہنی مریض قرار دیا۔

ریانا نے امریکی صدر کو ان کے ایک بیان کی وجہ سے انہیں ذہنی مریض قرار دیا۔

پاپ گلوکارہ نے ڈونلڈ ٹرمپ کو رواں سال اگست میں امریکی ریاست ٹیکساس اور اوہائیو میں ہونے والے دہشت گردی کے 2 واقعات میں ملوث افراد کو دہشت گرد نہ کہنے پر انہیں ذہنی مریض قرار دیا۔

خیال رہے کہ رواں برس اگست میں 2 سفید فام دہشت گردوں نے فائرنگ کرکے 20 سے زائد افراد کو ہلاک کردیا تھا۔

ان واقعات کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شدید مذمت کی تھی البتہ ان واقعات کو دہشت گردی کہنے کے بجائے انہیں ذہنی بیماری سے تشبہہ دی تھی۔

اس بیان کے بعد 31 سالہ ریانا نے ڈونلڈ ٹرمپ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اپنی ایک پوسٹ میں لکھا تھا کہ ‘ڈونلڈ ٹرمپ آپ نے دہشت گردی کو شاید غلط انداز میں لکھ دیا آپ کے ملک میں دو دہشت گردوں نے تقریباً 30 معصوم افراد کی جان لے لی’۔

اور اب ووگ میگزین کو دیے ایک انٹرویو میں ریانا نے دوبارہ اس ہی واقعے پر بات کی۔

گلوکارہ کا کہنا تھا کہ ‘یہ تباہ کن بات ہے لوگ ان ہتھیاروں سے مارے جارہے ہیں جو جنگ میں استعمال ہوتے ہیں اور قانونی طور پر ان کی خرید و فروخت بھی جاری ہے یہ بات نارمل نہیں’۔

گریمی ایوارڈ حاصل کرنے والی ریانا نے کہا کہ ‘اور اگر ایسے قاتلوں کو ان کی رنگ و نسل کے باعث کچھ اور نام دیا جائے تو یہ نسل پرستی ہے’۔

ریانا کے مطابق ‘عربی نسل سے تعلق رکھنے والے کسی شخص کے ہاتھوں میں یہ ہتھیار دیں اور وہ اس ہی طرح گولیاں چلائے تو پھر ڈونلڈ ٹرمپ کبھی اسے ذہنی مریض نہیں کہیں گے، امریکا میں اس وقت اگر کوئی سب سے بڑا ذہنی مریض ہے تو وہ امریکی صدر خود ہیں’۔

ریانا سے انٹرویو کے دوران امریکا میں موجود مہاجرین کو شہریت دینے کے لیے مشورہ بھی مانگا۔

جس پر گلوکارہ کا کہنا تھا کہ ‘میں کیا کہہ سکتی ہوں؟ کہ سب کچھ ٹھیک ہوجائے گا؟ ان کے ساتھ ہونے والی ذیادتیوں کے بارے میں جب سوچتی ہوں تو مجھے یقین نہیں آتا کے اصل زندگی میں یہ سب ہورہا ہے’۔

گلوکارہ نے ماضی میں دیے بیان میں ٹرمپ کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا کہ ‘ایک ایسی دنیا کا تصور کریں جہاں اے کے 47 ہتھیار خریدنا آسان لیکن ویزہ حاصل کرنا مشکل ہو، ایک ایسی دنیا جہاں ٹرمپ نے دہشت گردوں کے لیے ایک دیوار بنادی ہے تاکہ وہ امریکا میں رہ سکیں’۔

(Visited 14 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں