بس ایک فون کال پر جنس تبدیل کرنے کی سہولت

جنس

لندن: برطانیہ میں جنس کی تبدیلی پر پہلے بھی کوئی پابندی نہیں تھی۔ تاہم اس کے لیے جنسی پہچان کا سرٹیفکیٹ حاصل کرنا پڑتا تھا جس کا طریقہ کار کافی طویل تھا ۔

تاہم اب برطانوی شہر لیڈز کی کونسل نے ایک نئی قانون سازی کر دی ہے جس کے تحت محض ایک فون کال کرکے جنس تبدیل کروائی جا سکتی ہے۔

میل آن لائن کے مطابق لیڈز کی سٹی کونسل کی طرف سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ اب لیڈز شہر کے رہائشی کونسل کی ویب سائٹ پر جا کر یا کونسل کی کسٹمر سروسز ٹیم کو ایک فون کال کرکے جنس تبدیلی کی اجازت لے سکتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق لیڈز کونسل نے یہ نیا قانون رواں ماہ کے آغاز میں لاگو کیا ہے۔ سٹی کونسل کے چیف ایگزیکٹو ٹام ریورڈین کا کہنا ہے کہ ”ہم نے یہ اقدام جنس تبدیل کرانے کے خواہش مند مردوخواتین کی آسانی کے لیے اٹھایا ہے۔

پہلے جنسی تبدیلی کا سرٹیفکیٹ حاصل کرنے کے لیے انہیں کئی دفاتر میں جانا پڑتا تھا۔ اب وہ صرف سٹی کونسل میں ایک فون کال کرکے اپنی خواہش کا اظہار کریں گے اورسٹی کونسل خود باقی تمام دفاتر کو ان کی نئی جنسی پہچان کا ڈیٹا فراہم کر دے گی اور انہیں ان دفاتر میں جانے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔“

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں