وائٹ ہاؤس میں افطار ڈنر کا اہتمام، مسلم ممالک کے سفیروں کی شرکت

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے وائٹ ہاؤس میں مسلمانوں کے اعزاز میں افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے گزشتہ روز وائٹ ہاؤس میں افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا جس میں مختلف مسلم ممالک کے سفیر اور کابینہ کے ارکان نے شرکت کی۔

اس موقع پر ڈونلڈ ٹرمپ نے مہمانوں سے خطاب کرتے ہوئے ناصرف رمضان المبارک کی مبارک باد دی بلکہ شرکا کا شکریہ ادا کرتے ہوئے مذہب اسلام کی تعریف کرتے ہوئے بہترین دین کہا۔

واضح رہے کہ رمضان المبارک کے آغاز پر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکا سمیت دنیا بھر کے مسلمانوں کو رمضان المبارک کی مبارک باد دیتے ہوئے ان کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا تھا۔

loading...

یاد رہے کہ رمضان المبارک کی آمد کے موقع پر کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو سمیت عالمی رہنماؤں نے امت مسلمہ کو رمضان کی مبارک باد دی تھی۔

جسٹن ٹروڈو کا کہنا تھا کہ السلام و علیکم رمضان اسلام کی تعلیمات کا محور ہے، یہ مہینہ خدمت خلق، رواداری کا مہینہ ہے اور دوسروں کی ضروریات کا خیال رکھنے کا درس دیتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ چند ماہ مسلمانوں کے لیے نہایت تکلیف دہ رہے، مسلمانوں کو نفرت آمیز روئیے، اسلام فوبیا اور تشدد کا سامنا رہا ہے، ہم سب کو مل کر اسلام فوبیا کا مقابلہ کرنا ہوگا۔

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی، برطانوی وزیراعظم تھریسامے، فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون اور جرمن چانسلر انجیلا مرکل سمیت دیگر عالمی رہنماؤں نے بھی مسلمانوں کو رمضان کی آمد پر دل کی گہرائیوں سے مبارک باد پیش کی۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں