بابا کا ہر دن ہوتا ہے

بابا کا ہر دن ہوتا ہے

سب کہتے ہیں آج بابا کا دن ہے
پر بابا کا کوئی دن نہیں ہوتا
بابا کا تو ہر دن ہوتا ہے
بابا تو رب کا تحفہ ہیں
بابا تو گھر کی رونق ہیں
بابا تو روح کا چین بھی ہیں
بابا تو قلب کی دھڑکن ہیں
بابا تو نام ہی شفقت ہے
شفقت اور محبت ہے
بابا کا سایہ جب تک ہے
اولاد سلامت رہتی ہے
بابا تو دل کی ٹھنڈک ہیں
سب بابا ایسے ہوتے ہیں
بچوں کی خاطر جیتے ہیں
بچوں کی خاطر لڑتے ہیں
محنت مزدوری کرتے ہیں
اپنا سکھ وہ کھوتے ہیں
بچوں کی خاطر ہی تو وہ
اپنی خواہش کو کھوتے ہیں
بس اتنا کہنا چاہوں گی
جب باپ سلامت ہوتے ہیں
اولاد سلامت رہتی ہے
ہر باپ محافظ ہوتا ہے
اولاد کا سائیباں ہوتا ہے
تو بابا کا کوئی دن نہیں ہوتا
بلکہ
بابا کا تو ہر دن ہوتا ہے
زونیرہ شبیر

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں