سب ہی ترجمان ہیں…..یعنی بارکنگ ڈاگز

ترجمان

وفاقی وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا اسلام آباد میں ابھی پریس کانفرنس کر رہے ہیں اور عدلیہ سے متعلق بیان دے رہے ہیں. کبھی کہہ رہے ہیں کہ ان کے حلق سے رقم نکلوائیں گے کبھی تبدیلی کے دعوے دار بن رہے ہیں ۔

پوری پریس کانفرنس میں کہیں بھی انہوں نے آبی مسائل و وسائل کی حکمت عملی اور ماضی کی رپورٹس سے متعلق کچھ نہیں بتایا خان صاحب آپ ایسا کریں ساری وزارتیں ختم کرکے سب کو اپنا ترجمان رکھ لیں تاکہ سب بس یہ بتاتے رہیں کہ نون لیگ جھوٹی ہے اور ہم یہ کر دیں گے وہ کر دیں گے.

ویسے ترجمان سے یاد آیا کچھ روز قبل میں ایک سیاسی رہنماء کے پاس بیٹھی ہوئی تھی میں نے ان سے پوچھا کہ پارٹی کا ترجمان کس کو ۔۔۔بنایا جاتا ہے ایک زور دار قہقہے کے بعد کہنے لگے جس کا دماغ نہ ہو اور دروازے پر بیٹھا جیسے ہی کسی آفت کو دیکھے تو بولنے لگے

ضروری نہیں ہے کہ اس کو معاملے کا پتہ ہو کیونکہ اس نے سوچنا نہیں بس حق میں بولنا ہے،، اچانک میرے منہ سے نکلا ” یو مین بارکنگ ڈاگ ” میں نے معذرت کرتے ہوئے سلپ آف ٹنگ کا بہانہ کیا لیکن وہاں بیٹھے ہر شخص کے چہرے کے تاثرات بتا رہے تھے کہ کسی کو میری بات زیادہ نا گوار نہیں گزری ۔

خیر مدعے پر آئیں! وزیر صاحب یہ بتائیں آپ اپنی وزارت میں کہاں تک پہنچے ہیں،،، عجیب ڈرامہ رچایا ہوا ہے،،، پورا بلیٹن کھا جاتے ہیں اور ایک بھی کام کی بات نہیں کرتے ۔ تین کے بلیٹن میں تحریک انصاف کی پریس کانفرنس ہو تو آپا فردوس محلے کی پھپھو بن کر جو شروع ہوتی ہیں الزامات لگانے لگتا ہے بس ن لیگ سے بڑا کوئی مسئلہ ہی نہیں ہے. اس کے فوری بعد چھ کے بلیٹن میں لیگی شیرنی مریم اورنگزیب آتی ہیں وہ اپنے نسخے لیکر بیٹھ جاتیں ہیں.

loading...

الزامات کی وضاحتیں شروع،،،، ارے بھائی میں ایک عام آدمی ہوں مجھے بتاو کہ سیلاب کا کتنا خدشہ ہے؟ مجھے یہ بتاو کہ بارشیں کب تک ہوں گی؟ مجھے صاف پانی سے متعلق کچھ سناو،،،، روٹی کی قیمت کہاں پہنچی یہ بتاو،،،، ہاں وہ ٹیکس کا کیا بنا؟ بتانا ذرا سردیوں میں گیس آئے گی یا نہیں؟ ہاں وہ کیا بنا پچاس لاکھ گھروں گا،،،، ارے بھائی،، مجھے کوئی دلچسپی نہیں ہے کہ شہباز شریف نے 154 ملین میں چار فلیٹ خریدے یا پانچ،،، ادارے شو پیس ہیں کیا؟

ان سے کہیں تحقیقات کریں جب سزا ہوجائے یا بری ہوجائیں تو ایک چھ کالمی خبر چھاپ دینا لیکن یہ کیا کہ ہر روز پوری پنتالیس منٹ کی پریس کانفرنس میں وزراء ترجمان حکومت کا کردار ادا کر رہے ہیں۔

اپنے محکمے سے متعلق ان کے پاس نہ تو کچھ کہنے کو ہے نہ ہی دکھانے کو کیونکہ ہر کسی کی خواہش ہے کہ خان کے مرنے کے بعد کرسی اس کو مل جائے،، میرے گھر میں دو روز سے بجلی نہیں ہے، بارش صبح ہوئی تھی پانی ابھی تک اتنا کھڑا ہے کہ منا باہر گیا تو ڈوب جائے گا،،، گٹر بھی کھلے ہوئے ہیں میں نہ بھی ڈوبوں تو جہاں پاوں آیا وہیں گٹر میں مینڈکوں سے ساتھ قیام کرنا پڑے گا ۔۔

میرے عزیز وزراء کرام،،،، سیوریج کے مسئلے کا حل بتائیں،،، ڈاکٹر زیادہ پیسے لیتا ہے دوائی بھی مارکیٹ میں شارٹ ہے. جو مل بھی جائے وہ جعلی اور بے اثر ہے جوابدہ ہوں ۔

زیادہ ہی تکلیف ہے تو آپس میں ایک وٹس ایپ پر ایک گروپ بنائیں اور ایک دوسرے کے گریبان چاک کر دیں حتی کہ ایک دو کی موت بھی عبرت بن جائے.

ٹوئٹر کی جان بھی چھوڑ دیں. عوامی ویب سائٹ پر ہر وقت کی گالم گلوچ سے ہم بیزار آچکے ہیں ۔ یہ اپنے جھگڑے اپنے تک رکھیں ہمیں بس وہ بتائیں جو ہم جاننا چاہتے ہیں۔۔۔ ،

دعا مرزا

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں