پاکستان کرکٹ ٹیم کی آسٹریلیا سے شکست کی وجوہات!

پاکستان کرکٹ ٹیم

جیسا کہ سب جانتے ہیں کہ پاکستان کی ورڈ کپ والی ٹیم کا اعلان 18 اپریل کو کیا جائے گا ۔ اور اس سے پہلے 15 اپریل کو فٹنس ٹیسٹ ہوتا تھا جو کہ 23 کھلاڑیوں پر مشتمل تھا۔

ان کے فٹنس ٹیسٹ کے بعد 16 اور 17 اپریل کو قزافی سٹیڈیم میں ان کی ٹریننگ ہے ۔

سب اتنا تو جانتے ہی ہوں گے کہ کچھ روز پہلے پاکستان کا مقابلہ آسٹریلیا کے ساتھ تھا جس میں پاکستان کو آسٹریلیا نے بری طرح سے شکست دی پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان پانچ ون ڈے میچ کھیلے گئے جس میں سے آسٹریلیا نے پانچ کے پانچ میچ ہی آسٹریلیا کو ہرا دیئے۔ آخر اس کی کیا وجہ ہو سکتی ہے ؟

اس چیز کی معلومات تو سب کو ہی ہو گی کہ پی ایس ایل کے ختم ہونے کے کچھ عرصے بعد ہی پاکستان نے آسٹریلیا کو کھیلنا تھا اور پاکستان کرکٹ بورڈ نے ورڈ کپ کو پیش نظر رکھتے ہوئے پاکستان کی ٹیم میں سے کچھ کھلاڑیوں کو آرام کروایا اور باقی نئے کھلاڑیوں کو آسٹریلیا کے خلاف کھیلنے کا موقع دیا ۔

نئے کھلاڑیوں میں سے عاباد علی نے اپنے پہلے میچ ہی میں سینچری مار کر اچھی پرفارمنس کا مظاپرہ کیا ۔ ساتھ ہی محمد عسنین کو بھی یہ موقع دیا گیا تھا لیکن انہوں نے کوئی خاص پرفارمنس نہیں دی ۔

آسٹریلیا کے خلاف کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان کے چھ کھلاڑیوں کو آرام کروایا گیا جن میں پاکستان کے کپتان سرفراز احمد ، فخر زمان ، شداب خان حسن علی بابر اعظم اور شاہین آفریدی تھے ۔

آسٹریلیا سے وائٹ واش ہونے کی ایک یہ بھی وجہ تھی کہ سرفراز احمد کے آسٹریلیا کے خلاف نا کھیلنے پر شعیب ملک کو کپتان بنایا گیا۔ لیکن ٹیم کو پھر بھی شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔ ہمارے کئی کھلاڑیوں نے کئی میچز میں سینچریاں بھی ماریں لیکن ان کی سینچری بھی پاکستان کو ہار سے نا بچا سکی ۔ کیا آپکو نہیں لگتا کہ پاکستان کی ہار کی وجہ ہمارے چند کھلاڑیوں کو آرام کروانا بھی تھا؟

loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں