بھارت میں لیچی کھانے سے ہلاک بچوں کی تعداد 100 ہوگئی

بھارت

بہار: بھارت میں لیچی کھانے سے ہلاک ہونے والے بچوں کی تعداد 100 تک پہنچ گئی، شہریوں نے اپنی زمینوں سے اگنے والے لیچی کی فصل کو تلف کردی۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے علاقے مظفر گڑھ کے کسانوں اور شہریوں نے اپنی زمینوں سے اگنے والے لیچی کی فصل کو تلف کردیا۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ بھارتی ریاست بہار میں لیچی کھانے سے پراسرار دماغی بیماری میں مبتلا ہو کر مرنے والے بچوں کی تعداد 100 ہوگئی۔

loading...

بھارتی ریاست بہار میں دماغ کی سوزش کے باعث 10 سال سے کم عمر کے بچوں کی پراسرار ہلاکتوں کی وجہ وزارت صحت نے لیچی کو قرار دے دیا۔ ریاست بہار کی وزارت صحت نے والدین کو ہدایت جاری کی ہیں کہ بچوں کو خالی پیٹ لیچی کھلانے سے گریز کریں، لیچی میں ایسے اجزاء موجود ہوتے ہیں جو دماغ کی سوزش کا باعث کا بن سکتے ہیں۔

تحقیقات سے یہ ثابت ہوا ہے کہ بھارت ریاست بہار کے سب سے متاثرہ علاقے مظفر گڑھ میں اگنے والی لیچی میں ایک زہریلا مادہ پایا گیا ہے جو دماغی مرض کا باعث بنتا ہے۔

وزارت صحت کی تجویز پر ریاست بہار کے علاقے مظفر گڑھ کے کسانوں اور شہریوں نے اپنی زمینوں سے اگنے والے لیچی کی فصل کو تلف کردیا جب کہ مارکیٹ سے بھی لیچی کے ذخیرے کو اٹھایا جا رہا ہے۔

دوسری جانب بھارت میں شدید گرمی بھی قہر برسارہی ہے، شدید گرمی کے باعث ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 100 سے تجاوز کرچکی ہے۔

(Visited 4 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں