نیب کی ملی بھگت سے ن لیگ پر آج پھر وار کیا گیا، شہباز شریف

شہباز شریف

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ حکومت کی ناکامی اور نااہلی کا سارا ملبہ ن لیگ پر گر رہا ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ نیب کی ملی بھگت سے ن لیگ پر آج پھر وار کیا گیا اور بھونڈے طریقے سے شاہد خاقان عباسی کو ٹھوکر نیاز بیگ سےگرفتار کیا گیا۔

شہباز شریف نے کہا کہ شاہدخاقان نے کہا کہ مجھےکوئی پریشانی نہیں ہے، آرڈر دکھائیں اور گرفتار کر لیں لیکن وارنٹ گرفتاری کے مطالبے پر نیب آفیشلز ایک دوسرے کا منہ دیکھنے لگے۔

وزیراعظم وہ کام ضرور کریں گے جو ملکی مفاد میں ہو، اعجاز شاہ

انہوں نے کہا کہ عمران خان ان اقدامات سے عوام کی توجہ اصل مسائل سے ہٹانا چاہتے ہیں، عمران خان نیازی نے 11 مہینوں میں ملکی معیشت کا جنازہ نکال دیا ہے، عمران تباہ شدہ معیشت کے جنازےکو گرفتاریوں سے چھپانا چاہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ گیس کی لوڈشیڈنگ ختم کرنے میں شاہد خاقان عباسی کا کلیدی کردار ہے، بجلی اور گیس کے آنے سے کاروبار میں اضافہ ہوا اور روزگار بڑھا، نواز شریف اور ان کی ٹیم پر بھی دباؤ تھا لیکن گیس کی قیمتیں نہیں بڑھائیں کیونکہ نوازشریف کوملک کےغریب عوام کادکھ تھا۔

صدر مسلم لیگ نے کہا کہ نواز شریف کے دور میں آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن نہیں لی گئی، شاہد خاقان عباسی کا قصور کیا ہے کہ وہ نوازشریف کا وفادار ساتھی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ احتساب ہے تو احتساب ہے کہاں، کہاں ہے شفاف احتساب نئے پاکستان میں؟ احتساب کے نام پر یہ ن لیگ کے خلاف سیاسی انتقام کیا جا رہا ہے، احتساب یا تو ن لیگ کا کیا جا رہا ہے یا پھر پیپلزپارٹی کا۔

تاجروں کی ہڑتال کے حوالے سے بات کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ ہم نے اس لیے ہڑتال میں شمولیت نہیں کی کہ حکومت کو پتا چلے اس میں سیاسی آمیزش نہیں، ہڑتال میں اس لیے بھی شامل نہیں ہوئے تاکہ حکومت جان سکے یہ تاجر اور صنعتکار ہیں جو ہڑتال پر مجبور ہوئے ہیں۔

وزیراعظم کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ آپ نے پاکستان کو دنیا بھر میں بدنام کر دیا، کون یہاں سرمایہ کاری کرے گا۔

شہباز شریف نے کہا کہ عمران خان ان تمام حالات کے باوجود یہ کہتے ہیں اس کو نہیں چھوڑوں گا، یہ چور ہے، وہ چور ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کی ناکامی اور نااہلی کا سارا نزلہ ن لیگ پر گر رہا ہے۔

(Visited 1 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں