مقبوضہ کشمیر: عوام کرفیو توڑ کر باہر نکل آئے، فائرنگ سے ایک نوجوان شہید

مقبوضہ کشمیر

سری نگر: مقبوضہ وادی میں کرفیو کا 15واں روز، چار ہزار سے زائد کشمیریوں کو گرفتار کرلیا گیا، وادی میں جیلیں کم پڑ گئیں۔

کئی علاقوں میں مظاہرین کرفیو توڑ کر باہر نکل آئے، فورسز سے جھڑپوں میں ایک کشمیری شہید درجنوں زخمی ہوگئے۔

مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا 15 واں روز، ریاست کا پوری دنیا سے انٹرنیٹ اور فون کے ذریعے رابطہ منقطع ہے۔ متعدد علاقوں میں کشمیری کرفیو توڑ کر باہرنکل آئے اور بھارت مخالف نعرے لگائے۔ فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں ایک نوجوان شہید جبکہ درجنوں زخمی ہو گئے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق آنسو گیس کی وجہ سے دم گھٹنے سے ایک شخص جاں بحق ہوگیا۔ مظاہروں کے دوران ایک اور لڑکے نے گرفتاری سے بچنے کے لیے دریا میں چھلانگ لگا دی۔

خبر ایجنسی کے مطابق پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت اب تک چار ہزار سے زیادہ افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔ اس متنازع قانون کے تحت حکام کسی بھی شخص کو کم از کم دو سال تک مقدمہ چلائے بغیر حراست میں رکھ سکتے ہیں۔ حکومتی حراستی مراکز اور قید خانوں میں جگہ کم ہونے کی وجہ سے قیدیوں کو کشمیر سے باہر منتقل کیا جا رہا ہے۔

(Visited 4 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں