افغانستان کے صوبے ننگر ہار میں یوم آزادی کی تقریب میں 10 دھماکے، 66 افراد زخمی

افغانستان

کابل: افغانستان کے مشرقی صوبے ننگر ہارمیں 100ویں یوم آزادی کی تقریب میں بم دھماکوں کے نتیجے میں 66 افراد زخمی ہوگئے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق افغانستان کے مشرقی صوبے ننگر ہار میں 100 ویں یوم آزادی کی تقریب میں 10 دھماکے ہوئے جس کے نتیجے میں 66 افراد زخمی ہوگئے۔ دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا جہاں زخمیوں کی حالت تشویش ناک بتائی گئی ہے۔

افغانستان کی صوبائی حکومت کے نائب ترجمان نور احمد نے کہا کہ ننگر ہار کے دارالحکومت جلال آباد میں 10 دھماکے ہوئے ہیں، اکثر افراد کو معمولی زخم آئے جنہیں علاج کے بعد گھر بھیج دیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق حملے کی ذمہ داری کسی تنظیم نے قبول نہیں کی ہے تاہم ننگر ہار صوبے میں طالبان اور داعش سے وابستہ گروہ سرگرم ہیں۔

مقبوضہ کشمیر: عوام کرفیو توڑ کر باہر نکل آئے، فائرنگ سے ایک نوجوان شہید

جلال آباد میں واقع مارکیٹ کے قریب بم نصب تھے جہاں سیکڑوں افراد یوم آزادی کی تقریب میں شریک تھے۔ محکمہ صحت کے عہدیدار فہیم بشیری کے مطابق دھماکوں کے نتیجے میں 66 افراد زخمی ہوئے جن میں 20 بچے بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز افغان دارالحکومت کابل میں شادی کی تقریب میں ہونے والے خودکش دھماکے میں 63 افراد جاں بحق اور 182 افراد زخمی ہوگئے تھے۔

یاد رہے کہ افغانستان میں حالات بہت کشیدہ رہے ہیں، طالبان اور امریکہ امن معاہدے کے اعلان کے قریب پہنچ رہے ہیں طالبان اور امریکی نمائندے قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امن مذاکرات کررہے ہیں اور فریقین نے پیشرفت کی اطلاع بھی دی ہے۔

(Visited 3 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں