ڈک ورتھ لوئس قانون : پاکستان کو جنوبی افریقہ کے ہاتھوں شکست

جنوبی افریقہ

سنچورین: پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان کھیلے جانے والے تیسرے ون ڈے میچ میں ڈک ورتھ لوئس قانون کے تحت میزبان ٹیم کو 13 رنز سے فتح یاب قرار دے دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق جنوبی افریقہ نے 318 رنز کے ہدف کے تعاقب میں بیٹنگ کا آغاز کیا تو پروٹیز کی پہلی وکٹ 53 رنز پر گری جب ہاشم آملہ کو 25 رنز پر حسن علی نے بابر اعظم کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کرایا۔

وکٹ کیپر بلے باز کوئن ٹن ڈی کاک کو 33 رنز پر شاداب خان نے رن آؤٹ کیا۔

جنوبی افریقہ  نے مجموعی طور پر 187 رنز 2 وکٹوں کے نقصان پر بنائے جس کے بعد بارش کا آغاز ہوا تو کھیل روکنا پڑا، روکا  ہینڈرکس 83 اور کپتان فاف ڈوپلیسی نے 40 رنز  کی شاندار ناقابلِ شکست اننگز کھیلی۔

ڈک ورتھ لوئس قانون کے تحت امپائرز نے جنوبی افریقہ کی ٹیم کو فاتح قرار دیا یوں پانچ ون ڈے میچز کی سیریز میں ڈوپلیسی الیون نے دو میچز جیت لیے جبکہ پاکستان نے ابھی تک ایک ہی جیتا۔

بارش کے وقت جب کھیل روکا گیا تو  جنوبی افریقا کو میچ جیتنے کے لیے 17اوورز میں 131 رنز درکار تھے۔

قبل ازیں سنچورین میں کھیلے جانے والے تیسرے ون ڈے میچ میں پاکستان نے مقررہ اوورز 317 میں رنز بنائے اور جنوبی افریقا کو جیت کے لیے 318 رنز کا ہدف دے دیا، امام الحق نے شاندار سنچری اسکور کی وہ 101 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔

قبل ازیں سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا جو درست ثابت ہوا، فخر زمان صرف 2 رنز بنا کر ہینڈرکس کی گیند پر ربادا کو کیچ دے بیٹھے۔

حسن علی اور سرفراز کا نیا ریکارڈ

فخر زمان کے آؤٹ ہونے کے بعد بابر اعظم اور امام الحق نے شاندار پارٹنر شپ بنائی اور ٹیم کا اسکور 136 رنز تک پہنچادیا، بابر اعظم 69 رنز کی جارحانہ اننگز کھیل کر اسٹین کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوئے۔

محمد حفیظ نے 45 گیندوں پر 52 رنز کی برق رفتار اننگز کھیلی، وہ ربادا کی گیند پر فلک کوائیو کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے، شعیب ملک 31 رنز بنا کر پویلین روانہ ہوئے، حسن علی ایک رنز بنا کر اسٹین گن کا نشانہ بنے۔

(Visited 9 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں