تین میں، نہ تیرہ میں

’’میں تین میں ہوں نہ تیرہ میں، نہ ستلی کی گرہ میں‘‘ ’’اب تم نے اُردو کے محاورے بھی سیکھ لیے۔ ‘‘ ’’آپ میرا مذاق کیوں اُڑاتے ہیں۔ اردو میری مادری زبان ہے‘‘ ’’پدری کیا تھی؟ تمہارے والد بزرگوار تو ..مزید پڑھیں

Advertisements

تین موٹی عورتیں

ایک کا نام مسز رچمین اور دوسری کا نام مسز ستلف تھا۔ ایک بیوہ تھی تو دوسری دو شوہروں کو طلاق دے چکی تھی۔ تیسری کا نام مس ہیکن تھا۔ وہ ابھی ناکتخدا تھی۔ ان تینوں کی عُمر چالیس کے ..مزید پڑھیں

تصویر

’’بچے کہاں ہیں؟‘‘ ’’مر گئے ہیں‘‘ سب کے سب؟‘‘ ’’ہاں، سب کے سب۔ آپ کو آج ان کے متعلق پوچھنے کا کیا خیال آگیا۔ میں اُن کا باپ ہوں‘‘ ’’آپ ایسا باپ خدا کرے کبھی پیدا ہی نہ ہو‘‘ ’’تم ..مزید پڑھیں

تانگے والے کا بھائی

سید غلام مرتضیٰ جیلانی میرے دوست ہیں۔ میرے ہاں اکثر آتے ہیں۔ گھنٹوں بیٹھے رہتے ہیں۔ کافی پڑھے لکھے ہیں۔ ان سے میں نے ایک روز کہا ! ’’شاہ صاحب ! آپ اپنی زندگی کا کوئی دلچسپ واقعہ تو سنائیے!‘‘ ..مزید پڑھیں

پیرن

یہ اس زمانے کی بات ہے جب میں بے حد مفلس تھا۔ بمبئی میں نو روپے ماہوار کی ایک کھولی میں رہتا تھا جس میں پانی کا نل تھا نہ بجلی۔ ایک نہایت ہی غلیظ کوٹھڑی تھی جس کی چھت ..مزید پڑھیں

پھولوں کی سازش

باغ میں جتنے پھول تھے۔ سب کے سب باغی ہو گئے۔ گلاب کے سینے میں بغاوت کی آگ بھڑک رہی تھی۔ اس کی ایک ایک رگ آتشیں جذبہ کے تحت پھڑک رہی تھی۔ ایک روز اس نے اپنی کانٹوں بھری ..مزید پڑھیں

پھوجا حرام دا

ٹی ہاؤس میں حرامیوں کی باتیں شروع ہوئیں تو یہ سلسلہ بہت دیر تک جاری رہا۔ ہر ایک نے کم از کم ایک حرامی کے متعلق اپنے تاثرات بیان کیے جس سے اس کو اپنی زندگی میں واسطہ پڑ چکا ..مزید پڑھیں

پہچان

ایک نہایت ہی تھرڈ کلاس ہوٹل میں دیسی وسکی کی بوتل ختم کرنے کے بعد طے ہوا کہ باہر گھوما جائے اور ایک ایسی عورت تلاش کی جائے جو ہوٹل اور وسکی کے پیدا کردہ تکدّر کو دُور کر سکے۔ ..مزید پڑھیں

پشاور سے لاہور تک

وہ انٹر کلاس کے زنانہ ڈبے سے نکلی‘ اس کے ہاتھ میں چھوٹا سا اٹیچی کیس تھا۔ جاوید پشاور سے اُسے دیکھتا چلا آ رہا تھا۔ راولپنڈی کے اسٹیشن پر گاڑی کافی دیر ٹھہری تو وہ ساتھ والے زنانہ ڈبے ..مزید پڑھیں

پسینہ

’’میرے اللہ!۔ آپ تو پسینے میں شرابور ہورہے ہیں۔ ‘‘ ’’نہیں۔ کوئی اتنا زیادہ تو پسینہ نہیں آیا۔ ‘‘ ’’ٹھہریے میں تولیہ لے کر آؤں۔ ‘‘ ’’تو لیے تو سارے دھوبی کے ہاں گئے ہوئے ہیں۔ ‘‘ ’’تو میں اپنے ..مزید پڑھیں