فلمی کہانیاں اور حقیقی زندگی

تحریر: ایمن ایوب فلمیں بنانے والے اور کہانیاں لکھنے والے معاشرے کے حقیقی واقعات کو یا کسی فرد و خاندان کے حالات کو کہانی کے انداز میں لکھ کر پیش کرتے ہیں‘اسی طرح کوئی فلم ساز کہانی کی فلم بندی ..مزید پڑھیں

کیا میں بھی ایک عورت ہوں؟ایک عورت کا معاشرے سے سوال۔

تحریر :عبدالرزاق میو گرمیوں کی تپتی دوپہر جب سورج سوّا نیزے پر آگ برسا رہا ہوتا ہے۔ تو میں سڑک کی تعمیر کے لئے روڑی اور پتھر سڑک پر ڈالتی ہوں۔ مجھے پیاس بھی لگتی ہے اور بھوک بھی۔ اڑتی ..مزید پڑھیں

موسمی نزلہ،زکام،کھانسی کیلئے دیسی علاج اپنائیں

جب موسم کروٹ بدلتا ہے بہار کے بعد خزاں اپنے رنگ دکھاتی ہے سردیاں گرمیوں میں تبدیل ہو رہی ہوتی ہے یا موسم گرما کے بعد سردی آتی ہےاس وقت کا درمیانی عرصہ کھانسی نزلہ زکام گلے میں خراش اور ..مزید پڑھیں

یہ محاذ الیکشن تک یا صوبے کے حصول تک ؟

تحریر عبدالجبار خان دریشک ایک چھوٹا سا راستہ بڑی شاہرا میں یوں ہی تبدیل نہیں ہو جاتا ، خالی میدان پر آسمان کو چھوتی عمارت ایک رات میں تعمیر نہیں ہو جاتی ، دریا کا رخ ایک دن میں نہیں ..مزید پڑھیں

تعلیمی نظام کے باعث ملک تقسیم ہوتا چلا جارہا ہے

تحریر: نجم الثاقب ترقی یافتہ ریاستوں نے جہاں عوام الناس میں غریب و امیر کے طبقاتی فرق کو زائل کرنے کے لئے بہترین معاشی نظام مرتب کئے وہاں سماجی سسٹم کو بھی اس طرح وضع کیا ہے جس میں ہر ..مزید پڑھیں

بھاری بستہ، کمزور بچے، مہنگی کتابیں اور فریادی والدین

تحریر: عبدالجبار خان دریشک صبح سویرے اجلے یونیفارم پہنے روشن چہروں والے پیارے پیارے پھولوں کی ماند بچے جب سکول جارہے ہوتے ہیں تو ان معصوم پھولوں کے کندھوں پر لدے بھاری بستے دیکھ کر بڑا ترس آتا ہے ایک ..مزید پڑھیں

کام زیادہ ہیں مگر نیند بھی پوری کریں

مصروفیات زندگی کا لازمی حصہ ہے لیکن ان میں الجھ کر اپنے آرام کو فراموش کر دینا مناسب نہیں ہے۔  ہمارے ہاں لوگ عموما کاموں کی زیادتی کے باعث اپنی نیند ترک کر دیتی ہیں لیکن یہ طرز عمل بالکل ..مزید پڑھیں

بچوں کے ساتھ زیادتی اور قتل عام، بچوں کی تربیت میں والدین کا قردار

تحریر: غلام مرتضیٰ باجوہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں خواتین ،ننھی بچیوں اور بچوں سمیت زیادتی ، بدفعلی کے بعد قتل کے واقعات میں اضافہ خطرناک حد پارکرچکاہے ،اکثر والدین اس بات کا شکو ہ کرتے نظر آئیں گے کہ ..مزید پڑھیں