لاہور کی خبریں

حنا پرویز بٹ نے ہربنس میں گوالہ کالونی کے قیام کیخلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع کرادی۔

Hina-Butt01687499_201441318149

لاہور : مسلم لیگ(ن) کی رکن پنجاب اسمبلی حنا پرویز بٹ نے ہربنس میں گوالہ کالونی کے قیام کیخلاف اسمبلی میں قرارداد جمع کرادی۔گوالہ کالونی میں 5ہزار سے زائد بھینسیں اور ان فضلہ قریبی آبادیوں کے رہائشی کو بیماریوں میں مبتلا کررہا ہے۔میٹر اورنج لائن ٹرین،لاہور رنگ روڈ اور کینال روڈکے درمیان یہ گوالہ کالونی اربوں روپے کے پروجیکٹس پر د ھبہ بنی ہوئی ہیں۔انہوں نے مزید موقف اختیار کیا ہربنس پورہ کے علاقہ میں گوالہ کالونی قریب آبادیوں کے مسائلستان بن گی۔ان آبادیوں کے بیشتر رہائشی مختلف بیماریوں میں مبتلا ہو گئے ہیں۔بھینسوں کا فضلہ رنگ روڈ کے ساتھ سروس روڈ پر جمع رہتا ہے جس کی وجہ سے راستہ اکثر بند رہتا ہے سکول اورکالج جانے والے بچوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑھتا ہے۔اکثر اوقات گوالے سکول ٹائم پر بھینسوں کو روڈ پر نکال دیتے ہیں جس بچوں کے کپڑے بھی گندے ہو جاتے ہیں۔حکومت کی طرف سے لاہور شہر کے اندر بھینسیں رکھنے پر سخت پابندی ہے لیکن اس کے باوجود شہر کے بیچو بیچ بھینسوں کی موجودگی ضلعی انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔پنجاب حکومت کی جانب سے اربوں لاہور رنگ روڈ ،کینال روڈ اور اب اورنج لائن ٹرین پر لگا دیے ہیں لیکن ان تینوں منصوبوں کے درمیان گوالہ کالونی کا ہونا شہر یوں کیلئے باعث حیرت ہے۔گوالہ کالونی میں تقریبا پانچ ہزار کے قریب بھینسں موجود ہیں ۔جن کا فضلہ بھی ٹھکانے لگانے کیلئے کوئی انتظامات نہیں کیے جاتے یہ فضلہ رنگ روڈ کے ساتھ سروس روڈ پر ہی جمع رہتا ہے جس سے اکثر اوقات راستہ بھی بند ہو جاتا ہے اور اس کی وجہ سے قریبی رہائشی مختلف بیماریوں میں مبتلا ہو چکے ہیں ۔لہذا یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ کوٹلی گھاسی،نواب پورہ،رسول پورہ ،قلندر پورہ ،طفیل کالونی ،نئی آبادی اور ہربنس مارکیٹ علاقہ مکینوں کے مسائل کو مد نظر کرھتے ہوئے گوالہ کالونی جلد از جلد کسی اور جگہ پر شفٹ کیا جائے ۔ ہر بنس پورہ کے علاقہ میں لاہور رنگ روڈ کے ساتھ گوالہ کالونی قریبی رہائشی آبادی کیلئے درد سر بن چکی ہے