نصف سینچری سے بھی پہلے آل آؤٹ!!!

کیا نور کی گزشتہ شادیوں کے ناکامی نور کی اپنی غلطیاں تھیں یا سابق شوہروں کی تھی۔

نور کی پہچان ان کے رقص اور گلوکاری سے ہوتی ہے۔ لوگ ان کے شادیوں کی ناکامی اور تو اور تعداد سے سے متعلق ان گِنت سوال پوچھنے لگ گئے ہیں۔
ہر فین کی زبان پر ایک ہی سوال ہے، کیا نور کو چوتھی بار بھی سچا پیار نہین ملا؟ جان لیجیئے کہ ایک عورت کی زندگی اسان نہیں ہوتی۔
نور نے چوتھی شادی دو سال قبل معروف گلوکار حامد علی خان کے صاحبزادہ ولی حامد علی خان کے ساتھ کی۔ فلم ‘عشق پازِیٹو’ میں نور اور ولی ایک دوسرے کے قریب آئے اور دو سال مسلسل ایک دوسرے کو جاننے کی کوشش کرتے رہے۔ شادی کا ارادہ کرتے ہوئے دونوں نے اس بات کو خفیہ رکھنے کا بھی فیصلہ کیا۔ نور کا مزید کہنا تھا کہ جب تک صحیح وقت نہیں آتا تب تک شادی کو خفیہ ہی رکھیںگے۔ جب خبر منظرِ عام پر آگئی تو ولی نے اعتراف کر لیا جبکہ نور سے پوچھا تو ابتدا میں انہوں نے صاف انکار کر دیا۔
نور کا اس بار کہنا تھا کہ ان کے خیال میں ولی اب ان کی ساری زندگی کا ساتھ دیںگے۔ افسوس یہ کہ ایسا نہیں ہو سکا۔ نور کا کہنا تھا کہ اب اگلی شادی ان کی بیٹی فاطمہ کی ہوگی۔
نور نے طلاق کی وجہ بیان کرنے سے انکار کرتے ہوئے بتایا کہ ان کو معلوم تھاکہ انکی چوتھی طلاق پران کو شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑیگا اسی لیئے نور نے شادی بچانے کی بےہد کوشش کرنے کے بعد خلعہ لینے کا فیصلہ کر لیا۔ نور نے یہاں تک کہا کہ ‘اب میں اپنے شوہر کے گھر سے نہیں جاؤںگی، اب جنازہ ہی جائےگا۔ مگر بد قسمتی ایسی کہ میرے نصیب میں گھر کا سکھ ہے ہی نہیں۔’
ولی کا کہنا تھا کہ وہ خلعہ کے نوٹس سے بلکل بیخبر تھے۔ گزشتہ روز ولی نے نور کی درخواست پر عدالت کی یکطرفہ کاروائ کے فیصلہ کو چیلینج کر دیا۔ مزید کہتے ہیں کہ نور سے علیحدگی کا سوچ بھی نہیں سکتے۔
زرائع کے مطابق ولی حامد کے گلوکاراؤں کے ساتھ نازیبا طالقات کی وجہ سے زیادہ لڑائ ہوتی تھی اور جب صورتِ حال ٓاپے سے باہر ہونے لگی تو نوربہت سوچ سمجھ کر اکیلے ہی رہنے کا فیصلہ کر لیا۔
۲۰۰۴ میں نور دبئ شاپنگ کے سلسلے میں گئیں توایک اجنبی بھارتی ہندو سے ملاقات ہوئ۔ کچھ ارصے کے بعد دونوں نے ایک دوسرے سے محبت کا اظہار کیا۔ نور کی محبت میں گرفتار ہوکر وکرم نے اسلام قبول کر لیا۔ نور کو شادی کے کچھ ارصے بعد پتا چلا کہ وکرم، نور کے سابقہ شوہر، تاحال ہندو ہیں تو ان کو بے ہد شرمندگی کا سامنہ کرنا پڑا جس کی وجہ سے انہوں نے طلاق لے لی۔
دوسری شادی فاروق مینگل نامی ڈائریکٹرسے ہوئ جو کہ ذرائع کے مطابق، ۴ ماہ سے زیادہ نہیں چل سکی۔ نور کے بیان کے مطابق فاروق ان پر تشدد بھی کرتا تھا اور نشاہ بھی کرتا تھا۔
نورکی تیسری شادی پاکستان تحریکِ انصاف کے سربراہ عمران خان کے خاص اور قریبی دوست عون چوہدری سے ہوئ جو ایسے ہی کچھ ارصہ سے زیادہ نا چل سکی۔ بیٹی کی خشخبری سننے کے باوجود رشتہ قائم نا رہ سکا۔ بیٹی کی پیدایش کے کچھ ہی دیر بعد عون اور نور کے بیچ اختلافات بڑھنے لگے جس کا انجام طلاق نکلا۔ زرائع کے مطابق عون نے اپنی بیٹی بھی نور سے لینا چاہی تو نور کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔
نور ناکام شادیوں کے ہاتھوں تنقید کا نشانہ بنیں تو سہی،مگر ان کے خیال میں انہوں نے ہمیشہ اپنا ہم سفر سمجھ کے خوش ریہنے کا ایہد کیا، بس قسمت نے ہی ساتھ دینے سے انکار کر دیا۔

مزید پڑھیں۔  الیکشن 2018 کی مہم کے دوران پبلسٹی میٹریل میں ضابطہ اخلاق کی کوئی بھی خلاف ورزی برداشت نہیں ،الیکشن کمیشن

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں