دنیا کے خطرناک روڈ

لاس چاکا کولاس

یہ ارجینٹینا اور چلی کے مشترکہ باررڈر پر تعمیر شدہ 5 ہزار میل طویل روڈ ہے۔ یہ خطرناک موڑ والی سڑک ہے جسے مقامی افراد ’’ گھونگے کا خول‘‘ کے نام سے پکارتے ہیں۔ انڈس ارجینٹینا سے شروع ہو کر چلی تک جانے پر روڈ تقریباً سال بھر برف سے ڈھکا رہتا ہے۔ یہ روڈ 20 مقامات پر ہئیر پن کے موڑ کی مانند بل کھاتا ہے

اٹلانٹک روڈ

ایک ایسا روڈ جو محض 5 میل طویل ہے، ایک ایسی راہگزر جہاں زمین، سمندر سے ملتی ہے۔ یہ نہایت متاثر کن اور خوفناک نظر آتا ہے۔ یہ روڈ ایک رولر کوسٹر کی مانند نظر آتا ہے جس سے 8 مختلف پل نکلتے ہیں جو نارویجن جزیروں کو جوڑتے ہیں۔ سمندر کی لہریں مسلسل پل سے سے ٹکراتی ہوئی دوسری جانب گزر جاتی ہیں جس سے پانی پر چلتی گاڑیاں، پانی کا جہاز محسوس ہوتی ہیں۔

گاؤلنگ ٹنل روڈ

گاؤلنگ ٹنل روڈ دنیا کی خطرناک ترین سرنگوں میں سے ایک ہے۔ طویل راہدریوں اور پہاڑوں والی اِس سرنگ کا شمار دنیا کے خطرناک روڈ کے طور پر ہوتا ہے۔ سرنگ محض 16 فٹ لمبی ہے جب کہ اِس کی چوڑائی 13 فٹ ہے جب کہ اِس میں کھلنے والی 30 کھڑکیاں سفر کرنے والے کی توجہ کھینچ لیتی ہیں۔ اِس سرنگ کی سب سے دلچسپ خاصیت یہ ہے کہ اسے 13 دیہاتوں کے افراد نے مل کر صرف 5 برس کے عرصے میں ہتھوڑیوں اور چھینیوں کی مدد سےتعمیر کیا تھ

ا۔

سیاچن تبت ہائی وے

13 سو میل طویل سیاچن بائی پاس آپ کو چین کے صوبے سیاچن سے تبت پہنچا دے گا۔ دنیا کا اونچا ترین اور خطرناک ہائی وے ہے، اونچائی کی وجہ سے آکسیجن کی کمی اسے خطرناک بناسکتی ہے۔ اطراف میں اونچے، برفیلے اور پتھریلے پہاڑ ہونے کی وجہ سے برفانی طوفان اور لینڈ سلائیڈنگ معمول کی بات ہے۔
یہاں سال میں 10 مہینے تک بارش اور برفباری ہوتی رہتی ہے جس کی وجہ آپ یہاں پھنس بھی سکتے ہیں، بعض اوقات سیاچن ہائی وے پر سفر کرنے والے ڈرائیورز کئی ہفتوں تک یہاں پھنسے رہتے ہیں

مزید پڑھیں۔  سال کا تیسرا بڑا گرینڈ سلام ومبلڈن اوپن ٹینس ٹورنامنٹ 2 جولائی سے شروع ہوگا
loading...

۔

اسکیپرز کینئیون روڈ

اب دنیا کے جس خطرناک روڈ کے بارے میں ہم آپ کو بتا رہے ہیں یہ نیوزی لینڈ کے جنوبی جزیرہ پر واقع ہے جسے اسکیپرز کینئیون روڈ کہا جاتا ہے۔
بجری سے تعمیر شدہ اِس روڈ کی تعمیر 140 برس قبل کی گئی، 16 میل طویل انتہائی تنگ سڑک سے ایک وقت میں محض ایک گاڑی ہی گزر سکتی ہے۔

شمالی ینگاس روڈ

12 فُٹ چوڑے شمالی ینگاس روڈ کے ایک جانب پہاڑی کارڈیلرا پہاڑیوں کا سلسلہ ہے۔ جو سالانہ 300 حادثات کا سبب بنتی ہیں۔
بولیویا میں واقع اس روڈ کی خاص بات بائیں ہاتھ پر ڈرائیور کا ہونا ہے، جس کی وجہ سے آپ اونچائی سے نیچے کی جانب آتے ارد گرد کے دلکش نظاروں سے پر لطف ہوسکتے ہیں۔

جیمز ڈیلٹن ہائی وے

جیمز ڈیلٹن ہائی وے 414 میل طویل ہے جو 19974ء میں الاسکا پائپ لائن نظام کیلئے سپلائی روٹ کے طور پر تعمیر کیا گیا۔
اس طویل ترین سڑک کی سب سے خطرناک بات الاسکا کے جنگلات میں ہونے کی وجہ سے کسی بھی قسم کی سفری سہولت کا نہ ہونا ہے۔ یہاں کسی قسم کا کوئی بھی فیول سینٹر، ریستوران، ہوٹل میسر نہیں اور یہاں درجہ حرارت بھی عموماً صفر رہتا ہے۔

قراقرم ہائی وے

قراقرم ہائی وے کو دنیا میں سب سے اونچائی پر تعمیر شدہ پختہ سڑک ہونے کا اعزاز حاصل ہے۔ یہ چین اور پاکستان کو خنجراب بائی پاس کے ذریعے دنیا سے جوڑتا ہے۔ قراقرم روڈ 8 سو کلومیٹر طویل ہے۔ قراقرم ہائی وے پر سفر کرتے وقت اونچائی اور سرد موسم کے ساتھ لینڈ سلائیڈنگ اور ایوالانچز کا بھی خطرہ رہتا ہے۔ ہائی وے کے ایک جانب دیوار ہے جب کہ دوسری جانب کسی قسم کا کوئی حفاظتی بیرئیر نہیں اور ہزاروں فٹ گہری کھائیاں ہیں، یہ ایک خطرناک ترین روڈ ہے۔

مزید پڑھیں۔  تنازعہ کے باوجود’’پدماوت‘‘ نے ’’باہو بلی2‘‘ اور ’’دنگل‘‘ کا ریکارڈ توڑ دیا

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں