پاکستان کرکٹ بورڈ کو بھارت سے معاملات بات چیت سے حل کرنے چاہیے تھے۔ ظہیر عباس

zaheer_abbas-aajkal_google

پاکستان کرکٹ بورڈ کے بھارتی کرکٹ بورڈ پر مقدمے پر بات کر تے ہوئے سابق چیئرمین آئی سی سی ظہیر عباس نے کہا کہ پاکستانی کرکٹ بورڈ کے پاس کھیلاڑیوں کا پیسہ ہے جو انہیں کھیلاڑیوں پر ہی خرچ کرنا چاہیے تھا۔ مقدمے پر خرچ کی جانے والی رقم برباد ہو جائے گی اگر پی سی بی یہ مقدمہ ہار گیا تو۔ انہوں نے مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ بی سی سی آئی سیریز کی باہمی یاداشت کو معاہدہ منانے کو ہی تیار نہیں ہے، اس لیے پی سی بی کو چاہیئے تھا کا معاملہ بات چیت سے حل کرتا تو شاید کچھ حاصل ہو جاتا۔ اگر پاکستان کیس ہار جاتا ہے پیسے کی بربادی کے ساتھ ساتھ ملک کی بدنامی بھی ہوگی۔ یاد رہے کہ ماضی میں پی سی بی کے ایڈوائزر رہنے والے ظہیر خان کو نجم سیٹھی کے آںے بعد انہیں نظر انداز کر دیا گیا تھا۔ اس پر ان کا کہنا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ بورڈ کو ان سے اچھے ایڈوائزر مل گئے ہوں۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  11ویں قومی ٹین پین باؤلنگ چمپئن شپ منگل سے شروع ہورہی ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں