عمران خان اور 13 اگست کے جلسہ کی تقریب

۱۳ اگست، راولپنڈی میں ہونے والے جلسہ میں چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ، شیخ رشید نے ہمیشہ کی طرح ایک کال پرحکومت کو ہیران کر دینے والا لوگوں کا حجوم ایک بار پھر اکٹھا کر لیا۔ کیا نواز شریف اور عمران خان کے جلسہ کا مقابلہ کیا جا سکتا ہے؟جی ٹی ریلی کے سوشل میڈیا پر دیکھائے جانے والے مناظر بے تاہشہ تنقید کا نشانہ بنے۔ اکثریت کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے چاہنے والے اب کم رہ گئے ہیں۔ ریلی میں کم لوگوں کی شرکت اس بات کا ثبوت ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی کرپشن پاکستانیوں سے اب چھپی نہیں رہی۔
جی ٹی ریلی میں گاڑھی کے نیچے انے والے بچے کا واقعہ نوازلیگ کی تمام قیادت کا ایک اور ظلم اور بربریت کا نمونہ بن کے سامنے آگیا۔ غلطی کا اعتراف کرنے کے بجائے پولیس اہلکاروں کو خرید کر ایف آئی آر سے بچنے کی کوشش کی۔ عمران خان کیا اسی نظام کو ٹھیک کرنا چاہتے ہیں؟ جہاں پولیس اہلکار اپنے ملک اور اپنے شہریوں کی حفاظت کو ترجیح دیں ناکہ ملک کی بدنامی اور بےعزتی کا باعث بنے۔ جیسے عمران خان نے خیبر پختون خواہ کا نظام بدل دیا، کیا بلکل ویسے ہی پنجاب کا نظام بدلنے میں کامیاب رہینگے؟
جشنِ ٓزادی کے موقعہ پر، ۱۳ اگست کو ہونے والے جلسہ میں عمران خان نے کہا کہ نواز شریف کو سپریم کورٹ کے پانچ ججوں نے نااہل کردیا،نواز شریف کبھی بھی صادق اور امین نہیں تھے، اب سمریم کورٹ نے جب فئصلہ سنا دیا پھر بھی جی ٹی روڈ پر پچھلے دنوں ڈرامہ کیا۔ نواز شریف کی دکھ بھری تقریر سب نے سنی کہ مجھے کیوں نکال دیا؟ نواز شریف کا مزید کہناتھاکہ انہیں عوام نے مینڈیٹ دیا، انہیں نکالنے والے جج کون ہوتے ہیں۔عمران خان کے مطابق یہ سب کچھ وہ عدالت پر دباؤ ڈالنے کے لیے کررہے ہیں۔
راولپنڈی کے لیاقت باغ میں عوامی مسلم لیگ اور پی ٹی آئی کے مشترکا جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ 6 ماہ سے عدالت نواز شریف کے خلاف تحقیقات کررہی تھی، نواز شریف کا یہ ڈرامہ سپریم کورٹ اور نیب پر دباؤ ڈالنے کیلئے کیا جارہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف اداروں کے خلاف بات کررہے ہیں، انہوں نے 30 سال سے اداروں پر قبضہ کر رکھا تھا۔چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ نیب نے حدیبیہ پیپرز کیس میں ابھی تک اپیل نہیں کی، آرمی چیف نے 3 مرتبہ کہا ہے کہ فوج جمہوریت، آئین اور اداروں کے ساتھ کھڑی ہے۔
عمران خان نے کہا کہ میں آپ سے ایک وعدہ لینا چاہتا ہوں، سچے لوگ بنو، سچ بولنا سیکھو، جو لوگ سچ بولتے ہیں اللہ ان کی عزت کراتا ہے جو جھوٹ بولتا ہے انسان اس کی عزت نہیں کرتے، مجھے آپ سے توقع ہے کہ ہمیں سچ بولنا سیکھنا ہے۔انھوں نے کہا کہ میں نے کرکٹ میں پاکستان کی حکمرانی سے لے کے کینسر اسپتال قائم کرنے تک کا جو خواب دیکھا وہ پورا کیا۔
جلسہ میں عمران خان نے ایک نجی ٹی وی چینل کے مالک پر بھی خوب تنقید کی اور کہا کہ وہ صحافت نہیں جانتا جہاں سے پیسے ملیں، اسی کے ساتھ مل جاتا ہے۔عمران خان نے واضح کیا کہ آرمی چیف نے کہا ہے کہ فوج آئین اور اداروں کیساتھ کھڑی ہے، پھر نواز شریف بتاؤ کیسے سازش ہو گئی؟ نواز شریف سپریم کورٹ اور فوج کیخلاف بھی بول رہے ہیں، تیس سال سے نواز شریف اداروں پر قبضہ کر کے بیٹھا تھا، پہلی دفعہ نواز شریف جے آئی ٹی اور سپریم کورٹ کو منیج نہیں کر سکا، نواز شریف یہ سازش نہیں نیا پاکستان بن رہا ہے۔
تیز بارش بھی کارکنوں کے عزم اور ولولے کو کم نہ کر سکی۔ کئی گھنٹے جاری رہنے والی بارش کے باوجود کارکنوں کا جوش و جذبہ عروج پر رہا۔ سج دھج کے آئیں خواتین کارکنان بھی پارٹی نغموں پر پرجوش نظر آئیں۔ بارش میں بھیگتے بچے بچیاں بھی پارٹی پرچم اٹھائے نعرے لگاتے رہے۔ جلسے میں ہر طرف پارٹی پرچموں اور بینرز کی بہار نظر آئی۔ پی ٹی آئی کی خصوصی چھتریاں بھی کارکنان میں تقسیم کی گئیں۔

Spread the love

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں