چین میں سیکس ڈولز کا رجحان بڑھنے لگا۔

چین میں خواتین کی کمی کو سیکس ڈولز کی مد د سے پورا کر نے کا رجحان بڑھنے لگا۔

اب گھر بیٹھے چینی مرد حضرات تاکیو نامی موبائیل ایپ کے زریعے سیکس ڈولز منگواسکتے ہیں۔ چین میں تاکیو نامی ایک موبائل ایپلیکیشن کا استعمال بڑھ رہا۔ تاکیو لفظ کا مطلب انگلش لفظ ٹچ سے ملتاہے۔ یہ ایپلیکیشن اپنے صارفین کو مختلف سائززاورشکلوں کی سیکس ڈولز مہیا کرتی ہے۔

ایک سیکس ڈول ایک شخص  45 دنوں کے لیے کرایے پر لے سکتا ہے۔ اس ایپ کے زریعے سیکس ڈولز کی طلب زیادہ ہونے کی وجہ سے یہ ایپلیکیشن حکام کی جانب سے  کئی بار بند کی گئی ہے۔ تاہم یہ چین میں سیکس ڈولز کی بڑھتی ہوئی منڈی کا صرف ایک معمولی حصہ ہے۔ جو ملک میں خواتین کی بڑھتی ہوئی کمی کو ظاہر کرتا ہے۔

loading...

تجزیہ نگاروں کے مطابق اولاد میں لڑکوں کی خواہش اور آبادی کو کنڑول کرنے کے لیے بنائی گئی پالیسیاں اس مسئلے کی بڑی وجہ ہیں۔ پیشن گوئی کی جارہی ہے کہ 2030 تک چین میں مردوں کی تعداد خواتین سے تیس گنا زیادہ ہونے کا امکان ہے۔ اس مسئلے کے خاتمے کیلئے چینی حکومت نے 2015 میں دو بچوں کی پالیسی کا اعلان بھی کیا تھا لیکن تب تک یہ مسئلہ کافی بڑھ چکا تھا۔ اس مسئلے سے نبٹنےکے مختف حل پیش کیے جا رہے ہیں ،جیسے مشترکہ بیویاں رکھنے کے قدیم رواج  کو دوبارہ سے اپنانے(جو ایک ناممکن بات ہے)  سے متعلق بحثیں جنم لے رہیں ہیں۔ اور یہی وجوہات سیکس ٹوائز اور سکیس ڈولز کی طلب میں اضافے کا باعث بن رہی ہیں۔

مزید پڑھیں۔  امریکہ اور چین کے درمیان تجارتی جنگ کا آغاز

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں