گوگل کی اب ایک اور نئی پیش کش

گوگل اب اپسے اپکے زہنی دباؤ کا پوچھا کریگا.
کسی بھی پریشانی کا شکار ہوئے تو اب کسی اور سے نہیں بلکہ گوگل سے بات کیجئیے. گوگل کی کوشش ہے کہ لوگوں کے ایسے مسائل میں مدد کر سکے جن کی وجہ سے ین پر زہنی دباؤ رہتا ہے. یہ نئی پیش کش پاکستان میں بھی آنے والی ہے.
اس کا یہ ہر گز مطلاب نہیں کہ ڈاکٹر کی ضرورت نہیں ہوگی، بلکہ اگر مسلہ گوگل کو تشویش ناک محسوس ہوگا تو داکٹر پر جانے کی فوری ترکیب دیگا.
NAMI کے مطابق،ہر پانچ امریکیوں میں سے ایک ڈپریشن کا شکار ہے لیکن آدھ سے کم ڈاکٹر یہ کسی سے بھی مدد نہیں مانگتے. گوگل کی کوشش ہے کہ اس رواج کا توڑ نکالیں اور لوگوں کو کم از کم زہنی دباؤ کا شکار ہونا پڑے. گوگل کی یہ ایک ایسی نئی اجاد ہے کہ لوگوں میں شعور پیدا کر سکیں. گوگل کا مزید کہنا تھا کہ لوگ الاج میں دیر کر دیتے ہیں جس کی وجہ سے مسائل مزید خراب ہوتے ہیں اور اکثر جانیں بھی جاتی ہیں۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  گوگل امریکی فوج کی مدد نہ کرے، 3100 گوگل ملازمین کا کمپنی کو خط

اپنا تبصرہ بھیجیں