بھارت اس حکمت عملی پر عمل پیرا ہے کہ کشمیریوں پر بے انتہاء ظلم و جبر کے پہاڑ توڑے جائیں تاکہ وہ اپنی جدوجہدآزادی سے دستبردار ہو جائیں، سردار میر اکبر خان

مقبوضہ کشمیرسانحہ حول

کشمیری بھارتی مظالم اور جنگی جرائم کا ڈٹ کر مقابلہ کر رہے ہیں اور ان کے حوصلے ، جذبے اور ولولے میں کسی طور پر بھی کوئی کمی نہیں آئیگی‘وزیر جنگلات

اسلام آباد :وزیر جنگلات آذادکشمیر سردار میر اکبر خان  کا کہنا ہے کہ بھارت گزشتہ7دہائیوں سے طاقت کے زور پرکشمیریوں کے پیدائشی حق کو دبانے کی کوشش کررہاہے بھارتی قابض افواج کی جانب سے قتل و غارت اور ظلم و بربریت کے باوجود وہ اپنے پیدائشی حق، حق خودارادیت حاصل کرنے سے کبھی پیچھے نہیں ہٹیں گے بھارتی مظالم اور جنگی جرائم کا کشمیری ڈٹ کر مقابلہ کر رہے ہیں اور ان کے حوصلے ، جذبے اور ولولے میں کسی طور پر بھی کوئی کمی نہیں آئیگی کشمیربین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ مسئلہ ہے، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی اس پر قراردادیں ہیں ہم حق خودارادیت کیلئے جدوجہد کرتے رہیں گے مقبوضہ کشمیر کے قائدین کو یقین دلاتے ہیں کہ آزادکشمیر کی ساری سیاسی جماعتیں پاکستانی وکشمیری عوام ان کی پشت پرہیں ۔

   دلیرمسلم  کشمیریوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا  کہ وہ ان نامساحد حالات میں اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر رہے ہیں اور اپنے خون سے اس تحریک آزادی کو زندہ رکھے ہوئے ہیں بھارت کی قابض افواج نے اسی نام نہاد سکیورٹی آپریشن کی آڑھ میں ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت کشمیریوں کا قتل عام کر رہی ہیں انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ہر روز لا تعدادبے گناہ کشمیری نوجوانوں اور بچوں کا خون بہایا جا رہا ہے، خواتین کو بیوہ اور بچوں کو یتیم کیا جا رہا ہے ان کے گھروں کو مسمار اور املاک کو تبادہ کیا جا رہا ہے اور بھارت نے پورے کشمیر میں تشدد و بربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے ۔

مزید پڑھیں۔  مادھوری ڈکشٹ اور انیل کپور کی فلم ٹوٹل دھما ل 7 دسمبر کو ریلیز ہوگی۔
loading...

اس پر عالمی برادری کی خاموشی نہایت افسوسناک ہے، ان خیالات کا اظہارانہوں نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ بھارت اپنی طاقت کا بے جا استعمال کرتے ہوئے معصوم کشمیریوں کو آئے روز اپنی دہشت گردی کا نشانہ بنا رہا ہے جو جنگی جرائم ہے انہوں نے شوپیاں میں شہید اور زخمی ہونے والے کشمیری نوجوانوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کا خون رائیگاں نہیں جائے گا۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ سال سے اب تک پیلٹ گنوں کے ذریعے 1314معصوم کشمیریوں کو بینائی سے محروم کر دیا گیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ خطرناک اور جان لیوا پیلٹ گنوں سے متعددافراد کی اموات بھی واقع ہوئی ہیں۔ انکا کہناا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی افواج کی جانب سے پبلک سیفٹی ایکٹ اور آرمڈ فورسز سپیشل پاور ایکٹ کے تحت ہونے والی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کے لئے بین الاقوامی اداروں کے کمیشن کو مقبوضہ کشمیر بھیجا جائے تاکہ وہاں کی حقیقی صورتحال دنیا کے سامنے لائی جا سکے ۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں