پاکستان راہ حق پارٹی کے خلاف درخواست الیکشن کمیشن نے مسترد کر دی

راہ حق پارٹی

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پاکستان راہ حق پارٹی کی رجسٹریشن منسوخی درخواست مسترد کر دی۔ درخواست گزار وکیل گل زہرہ رضوی نے موقف اختیار کیا تھا کہ پی آر ایچ پی کا مبینہ تعلق کالعدم تنظیم اہل سنت والجماعت سے ہے۔

 ای سی پی نے درخواست گزار کو وفاقی حکومت سے رابطہ کرنے کی ہدایت کر دی۔ درخواست گزار چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا کی سربراہی میں دو رکنی بینچ کے سامنے پیش ہوئے اور کہا کہ مولوی معاویہ اعظم ولد اعظم طارق (کالعدم تنظیم سپاہ صحابہ کے رہنما) نے پنجاب اسمبلی کے انتخابات کے بعد پی آر ایچ پی میں شمولیت اختیار کر لی ہے۔

loading...

 انہوں نے کہا کہ پی آر ایچ پی کے کالعدم تنظیم سپاہ صحابہ (ایس ایس پی) کے ساتھ تعلقات ہیں، جو نام بدل بدل کر سامنے آجاتی ہے۔ درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ الیکشن ایکٹ کے سیکشن 212 کے تحت پارٹی کی رجسٹریشن منسوخ کی جائے۔

 خیبر پختونخوا سے سے ای سی پی کے رکن جسٹس (ر) ارشاد قیصر نے پوچھا اگر درخواست گزار کے مطابق پی آر ایچ پی دہشت گردی میں ملوث ہے۔ جس پر پٹیشنر کے وکیل نے بتایا کہ جو لوگ پی آر ایچ پی کے جھنڈے کے نیچے انتخابات میں حصہ لے رہے تھے وہی ایس ایس پی میں بھی تھے۔

پٹیشنر نے موقف اختیار کیا کہ معاویہ اعظم کا نام فورتھ شیڈول میں آیا۔ بعدازاں کمیشن نے پی آر ایچ پی کی رجسٹریشن سے متعلق منسوخی کی درخواست مسترد کر دی اور انہیں حکومت سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی۔

مزید پڑھیں۔  مقبوضہ کشمیر میں بس کھائی میں گرنے سے 13 مسافر جان کی بازی ہار گئے

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں