آصف علی زر داری نے ہمیشہ قانون کا احترام کیا ہے، مولابخش چانڈیو

آصف علی زر داری
loading...

اسلام آباد:پاکستان پیپلز پارٹی نے کہاہے کہ آصف علی زر داری نے ہمیشہ قانون کا احترام کیا ہے اور آئندہ بھی کرینگے ،عدالتیں انصاف کریں تو سب عدالتوں کی عزت کرینگے ٗ نوازشریف اور مریم اپنے ساتھ پوری فوج لے کر آرہے ہیں ،نوازشریف کی واپسی پر امن وامان کے حوالے سے خدشات ہیں تو نگران حکومت کو اقدامات کرنے ہونگے ۔

پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے پا کستان پیپلز پارٹی کے ترجمان مولا بخش چانڈیو نے کہاکہ عدالتیں انصاف فراہم کریں تو سب عدالتوں کی عزت کریں گے اور پیش بھی ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ بی بی شہید تو پاکستان اکیلی وا پس آئی تھیں اور پھر بھی ان کو جیل میں بند کر دیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ نواز شریف اور مریم نواز کو عدالتوں نے مجرم قرار دیا ہے لیکن وہ اپنے ساتھ پوری فوج لے کر آرہے ہیں۔

نواز شریف کی واپسی پر امن و امان کے حوالے سے خدشات تو ہیں جس کیلئے نگران حکومت کواقدامات کرنا ہوں گے تاکہ صورتحال خراب نہ ہوں۔ انہوں نے کہاکہ آصف زرداری اور پیپلز پارٹی نے ہمیشہ قانون کا احترام کیا ہے اور خود کو قانون کے حوالے کیا ہے ٗ اب بھی آصف زرداری عدالتوں کا احترام کریں گے اور قانون کے مطابق خود پر لگے الزامات کا سامنا کریں گے اور اپنا موقف پیش کریں گے۔

الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے سینٹ میں اپوزیشن لیڈر شیری رحمان نے کہا کہ (ن)لیگ کے کارکنان کو اٹھایا جا رہا ہے، ہمارے ورکرز پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے، آصف زرداری کے خلاف منی لانڈرنگ کا کیس اچانک کھول دیا گیا، بغیر تفتیش کے آصف زرداری کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا، قبل از انتخابات دھاندلی جیسی باتیں ہورہی ہیں، کچھ دن پہلے الیکشن کمیشن کو سیکیورٹی سے متعلق خط لکھا تھا، قواعد و ضوابط سے متعلق الیکشن کمیشن سے رابطے میں ہیں، وفاداریاں تبدیل کرنے کیلئے لوگوں پر دباؤ ڈالا جارہا ہے، ہماری جماعت کو انتخابی مہم سے روکا جارہا ہے، ہمارے امیدواروں کو نااہل کیا جا رہا ہے۔

مزید پڑھیں۔  غیر ملکی فنڈنگ کیس اب پیپلز پارٹی اور ن لیگ کو بھی جواب دینا ہوگا

ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ پیپلز پارٹی الیکشن موخر کرنے کی حامی نہیں ہیمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اعتزاز احسن نے کہا کہ سپریم کورٹ نے آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم نہیں دیا تھا۔ میڈیا نے عدالتی فیصلے کی غلط تشریح کرکے آصف زرداری اور فریال تالپور کے نام ای سی ایل میں ڈالنے سے متعلق غلط خبریں چلائیں۔ چیف جسٹس نے اپنے فیصلے کی وضاحت کردی الیکشن پچیس جولائی کو ہوتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے سابق صدر آصف علی زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ چیف جسٹس جو حکم جاری کریں گے قبول ہوگا‘ عدالت نے صاف کہہ دیا ہے کہ آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل پر نہیں ڈالے جاسکتے‘ سپریم کورٹ نہیں چاہتی شفاف الیکشن پر کوئی سوال اٹھے۔ انہوں نے کہا کہ یہ تمام واقعات صرف پاکستان پیپلز پارٹی کو بدنام کرنے کے لئے کئے جارہے ہیں پاکستان پیپلز پارٹی کی ہی جیت ہوگی۔

ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ آصف زرداری کا زرداری گروپ کمپنی سے کوئی تعلق نہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایف آئی آر میں آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام نہیں ہے۔ پیرا گراف چار کے ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا کہا گیا تھا ٗ عدالت کے تمام سوالوں کے جواب دینے کے لئے تیار ہیں پتہ کرنا ہے ڈیڑھ کروڑ روپے کس نے اکاؤنٹ میں ڈالے پیپلز پارتی کو بدنام کرنے کے لئے یہ سب ہورہا ہے۔

مزید پڑھیں۔  فیس بک روسی آپریٹرز کے ساتھ مسلسل حالتِ جنگ میں ہے،مارک زکر برگ

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں