کیا 2019 میں پاکستان فائیو جی 5G ٹیکنالوجی میں قدم رکھ لے گا؟

5G ٹیکنالوجی

وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے اے پی پی کو دیئے گئے ایک انٹرویو کے دوران یہ عندیہ
دیا ہے کہ

“2019 پاکستان میں فائیو جی 5G ٹیکنالوجی کی آمد کا سال ہو گا”

انہوں نے اشارہ دیا کہ فائیو جی سروس کو پاکستان میں اگلے سال متعارف کرایا جاسکتا ہے جس سے غیرملکی سرمایہ کاری بڑھانے میں مدد ملے گی۔

نیشنل ٹیلی کمیونیکشن کارپوریشن ہیڈکوارٹرز میں بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ ملک میں پہلے ہی تھری جی اور فور جی موبائل براڈ بینڈ ٹیکنالوجی کا کامیاب تجربہ کیا جاچکا ہے اور ہر گزرتے دن کے ساتھ ان سروسز کو استعمال کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔

loading...

انہوں نے کہا ‘ہمیں موبائل براڈبینڈ میں مزید نئی سروسز کو متعارف کرانے کی ضرورت ہے جس سے نہ صرف صارفین کو سہولت ملے گی بلکہ غیرملکی سرمایہ کاروں کو متوجہ کرنے اور موجودہ دور کی ضروریات پوری کرنے میں مدد ملے گی’۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ‘ دنیا بہت تیزی سے بدل رہی ہے اور دیگر اقوام سے مسابقت کے لیے ہمیں نئی ٹیکنالوجیز کو اپنانے کی ضرورت ہے’۔

انہوں نے توقع ظاہر کی کہ غیرملکی کمپنیاں فائیو جی سروس کو متعارف کرانے کے لیے خود رجوع کریں گی۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ پاکستان غیرملکی سرمایہ کاری کے لیے بڑی مارکیٹ ہے اور دنیا بھر میں پانچواں بڑا فری لانسنگ ملک ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ اسمارٹ فون اور انٹرنیٹ موجودہ عہد کی ضرورت ہے جن کی مدد سے لوگوں کو روزمرہ کے متعدد مسائل پر قابو پانے میں مدد مل سکتی ہے۔

مزید پڑھیں۔  عیدالاضحٰی پر مسافروں کیلیے اسپیشل ٹرینیں

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں