ایران سے کاروبار پر جان بولٹن کا سخت ردعمل ،وائٹ ہاؤس

جان بولٹن

یورپ ابھی تک صدر ٹرمپ کے آٹھ مئی کے اقدام کو ہضم کرنے کی کوشش کررہا ہے،مشیر قومی سلامتی جان بولٹن

واشنگٹن :وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے خبردار کیا ہے کہ ایران کے ساتھ کاروبار کرنے والی یورپی کمپنیوں پر امریکی پابندیاں عاید کی جاسکتی ہیں۔

امریکی ٹی وی کی معلومات کے مطابق ایک انٹرویومیں ان سے سوال پوچھا گیا کہ اگر یورپی کمپنیاں ایران کے ساتھ کاروبار جاری رکھتی ہیں تو کیا امریکا ان کے خلاف بھی پابندیاں عاید کر دے گا؟۔

 اس کے جواب میں جان بولٹن نے کہا کہ یہ ممکن ہے اور اس کا انحصار دوسری حکومتوں کے طرز عمل پر ہے۔ جان بولٹن نے اس حوالے سے ایک اور سوال کے جواب میں کہا کہ میرے خیال میں یورپی اسی میں اپنا مفاد سمجھیں گے کہ وہ بھی ہمارے ساتھ آ ملیں ۔

جان بولٹن کا کہنا تھا کہ یورپ ابھی تک صدر ٹرمپ کے 8 مئی کے اقدام کو ہضم کرنے کی کوشش کررہا ہے۔جان بولٹن نے کہاکہ میرے خیال میں یورپ میں بعض محسوسات پائے جاتے ہیں ۔ جوہری سمجھوتے سے ہمارے انخلا پر واقعی حیرت ہوئی ہے۔

جان بولٹن امریکا کی ایران کے خلاف سخت پابندیوں کے نفاذ پر بھی حیرت ہوئی ہے۔ میرے خیال میں یہ اثر کریں گی ۔اس کے بعد ہم دیکھیں گے کہ کیا ہوتا ہے؟۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  ڈولفن سمندرمیں ہر وقت شور مچانے اور کرتب دکھانے والی مچھلی ہے۔یسری انصاری

اپنا تبصرہ بھیجیں