موسمی نزلہ،زکام،کھانسی کیلئے دیسی علاج اپنائیں

Loading...

جب موسم کروٹ بدلتا ہے بہار کے بعد خزاں اپنے رنگ دکھاتی ہے سردیاں گرمیوں میں تبدیل ہو رہی ہوتی ہے یا موسم گرما کے بعد سردی آتی ہےاس وقت کا درمیانی عرصہ کھانسی نزلہ زکام گلے میں خراش اور بخار جیسے موسمی امراض کو بہت سازگار ماحول فراہم کرتا ہے۔

 یہ شکایت عموما الرجی یا پھر وائرس اور جراثیم کی وجہ سے ہوتی ہیں ان کے علاج کیلئے دیسی طریقے کو بہت فائدہ مند ہمیشہ سے پایا گیا ہے۔ ان دیسی طریقوں کا ایک فائدہ یہ بھی ہے کہ اگران کے کوئی مثبت نتائج نہیں نکلتے تو کوئی سائیڈ فیکٹس بھی نہیں ہوتے۔

ادرک

 ادرک کو روایتی چینی طریقہ علاج میں ٹھنڈ کے ساتھ بخار، سر درد اور پٹھوں کے درد میں استعمال کیا جاتا ہے۔ ابتدائی دور میں یورپی لوگ جڑی بوٹیوں کے ماہر تھے۔ وہ ادراک کو نزلہ زکام کا علاج تسلیم کرتے تھے ۔

ادرک میں ایک یہ خوبی بھی پائی جاتی ہے کہ یہ جسم کے مدافعتی نظام کو طاقتور بناتی ہے اس کی توانائی بحال کرنے والی خصوصیات نزلہ زکام میں قیمتی دوا کا درجہ دیتی ہے۔

 اس کا تیکھا ذائقہ دوران خون کو تیز کرتا ہے۔ جسم سے فاسد مادوں کو خارج کرتا ہے بند ناک کھولتا ہے اور پھیپڑوں میں جمع شدہ بلغم کو نکالتا ہے۔

 ادرک اور لیموں کو ملا کر ایک خوش ذائقہ شربت بھی تیار کیا جاسکتا ہے اس مقصد کے لئے ادرک کے 115 گرام وزنی ٹکڑے کو دھوکر اچھی طرح کتر لیں اور اسے 600 ملی لیٹر پانی سے بھرے برتن میں ڈال دیں۔

نزلہ،زکام،

 یہ برتن المونیم کا نہ ہو اس کے بعد ایک لیموں کو کدوکش کریں اور چھلکے سمیت برتن میں شامل کر دیں البتہ لیموں کے بیج نکال لیں۔ اس میں ایک چٹکی بھر سرخ پسی ہوئی ملائیں اور پانی کو 20 منٹ تک دھیمی آنچ پر کھولنے دیں۔

 اس دوران باقی بچے ہوئے لیموں کو ایک کپ میں نچوڑیں جب ادرک کا آمیزہ پک کر تیار ہو جائے تو اسے چولہے سے اتار لیں اور ٹھنڈا ہونے دیں اور اس کے بعد اسے ایک کپ میں نکالی اس میں لیموں کا رس شامل کریں ۔

 ذائقے کے لئے شہد بھی ملا دیں۔ اس نیم گرم خوش ذائقہ آمیزے کو دن میں کئی بار بالخصوص رات کو سونے سے پہلے استعمال کرنے سے نزلہ زکام کافی آرام ملتا ہے۔

گلاب

گلاب کی پنکھڑیوں میں موجود وٹامنز اور دیگر غذائیت بخش اجزا فوری طور پر جسم میں جذب ہوکر اثر دکھاتےہیں۔گلاب کا جوشاندہ تیار کرنے کے لئے تازہ اور خشک دونوں قسم کی پتیاں استعمال کی جا سکتی ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ ایک اوسط سائز سنگترے سے 20 گنا زیادہ وٹامن سی گلاب کے ایک پھول میں ہوتا ہے۔

نزلہ،زکام،

 گلاب کی چائے تیار کرنے کے لیے گلاب کے دوتین پھولوں کی پنکھڑیوں کو رات بھر پانی میں بھگو کر رکھیں۔ اس کے بعد ڈھائی کپ پانی کو المونیم کے سوا کسی بھی برتن میں ابالیں۔

 اس نے گلاب کی پھولی ہوئی پتیاں ڈال دی اور تقریبا تیس منٹ ہلکی آنچ پر دوش دے اس کے بعد اس آمیزے کو چھان ایک کپ میں نکال لیں۔ جی چاہے تو مٹھاس کے لیے اس میں تھوڑا سا شہد شامل کرلیں  اور دن میں کھانے کے وقفے کے دوران اس  جوشاندے  کو پئیں ۔

اس طرح جسم سے فاسد مادے کے اخراج میں مدد ملے گی اور ساتھ ساتھ نزلہ زکام اور سر درد میں افاقہ ہوگا

Loading...

جنگلی پودینہ

  میں تیزی سے اڑ جانے والا تیل تھائی مول پایا جاتا ہے۔Thyme جنگلی پودینہجس میں انتہائی وافر مقدار میں جراثیم کش خصوصیات ہوتی ہیں۔ جس کی وجہ سے جسم کے مدافعتی نظام کو فعال کرنے میں یہ پودینہ ایک ٹانک کا درجہ رکھتا ہے۔

نزلہ،زکام،

اس کے باعث سینے میں جمی بلغم کو نکلنے میں اور سانس کی نالیوں کے کھچاؤ میں آرام ملتا ہے۔ جوشاندے کہ طور پرجنگلی پودینے کی پتیاں اور پھول دونوں استعمال کیے جا سکتے ہیں۔

 ایک چائے کے چمچ جنگلی پودینے کو ایک کپ پانی میں ڈال کردس منٹ اچھی طرح پکائیں۔ اس کے بعد چھان لیں ا ور اس میں شہد ملا کر لیموں کا ایک ٹکڑا ڈال دیں اور دن میں تین بار اس کا استعمال کریں۔

لہسن

 لہسن میں طاقتور جراثیم کش اور وائرس کو ختم کرنے والی خوبیاں پائی جاتی ہیں۔نزلہ زکام اور کھانسی کا یہ بہترین قدرتی علاج سمجھا جاتا ہے۔شہد کے ساتھ اس کا استعمال بہت مفید رہتا ہے نزلہ، زکام سے بچاؤ یا علاج کیلئے  لہسن کو چھلکے سمیت ہاون دستے میں کوٹ لیں۔

نزلہ،زکام،

 اس کے بعد اسے ایک برتن میں ڈال کر ڈیڑھ کپ پانی ڈالیں اور برتن کو ڈھک کر تقریبا بیس منٹ تک ہلکی آنچ پر گرم کریں۔اس کے بعد آدھا لیموں کاٹ کراس میں نچوڑیں اوردو بڑے چائےکے چمچ شہد ملا دیں دو تین منٹ تک اسے مزید گرم کریں پھر آمیزے کو ٹھنڈا ہونے کے بعد نتھار کر ایک صاف گہرے رنگ کے شیشے کے جار یا بوتل میں محفوظ کر لیں جس پر ڈھکن مضبوط لگا ہو۔

یہ شربت بوتل میں ڈال کر فریج میں رکھ لیں اس طرح اس کو دو تین ہفتے تک استعمال کیا جاسکتا ہے۔

 بھاپ لینا

 خوب گرم پانی میں مخصوص خوشبودار تیل کے چند قطرے شامل کرکے اگراس بھاپ کو سانس کے راستے اندر کھینچا جائے تو اس سے سانس کی نالیوں میں گرمی پہنچتی ہے اور وہ مرطوب ہو جاتی ہیں۔

تیل ملے ہوئے بھاپ سے بند لاک کھل جاتی ہےاور بلغم پیدا کرنے والی جھلیاں ڈھیلی ہوکرجلغم کو باہر خارج کر دیتی ہیں۔  خوشبودار بھاپ سے زیادہ فائدہ اٹھانے کے لئے بہتر ہوگا کے پانی کو زیادہ سے زیادہ گرم کیا جائے اور گرم بھاپ کھینچی جائے۔تاہم بھاپ اتنی گرم نہ ہوکہ اس سے نتھنے جلنے لگیں یا حلق میں خراش پڑ جائے۔کھولتے ہوئے پانی میں عموما ٹی ٹری سے کشید کردہ تیل شامل کیے جاتے ہیں جو بازار میں عام دستیاب ہیں۔

نزلہ،زکام،

 یہ دونوں تیل جراثیم وائرس اور فنگس کے خاتمے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ بھاپ لینے کے لئے پہلے ایک پتیلی میں پانی ابالیں اور پھر ایک کھلے چوڑے منہ کے برتن میں تقریبا ڈھائی کپ کھولتا ہوا پانی ڈالیں۔اس کے بعد کا جوپت تیل کے تین قطرے اور یو کلپٹس آئل کے دو قطرے اس میں ٹپکائیں۔

 پھر اپنے سراورکندھوں کو ایک تولیے سے ڈھانپ لیں اوربھاپ کو اندر  کھینچیں۔ جوں جوں تیل پانی میں حل ہو کربھاپ کے ساتھ اوپر اٹھے، آپ جتنی گہری سانس لے سکتے ہیں لیں۔اس طرح تیل اپنا اثر دکھائے گا۔بند ناک کھل جائے گی سانس کی نالیوں میں موجود جراثیم اور وائرس کا خاتمہ ہوگا زنزلہ زکام کی دوسری علامتیں دور ہوجائیں گی۔کاجوپت اور یوکلپٹس کے تیل دستیاب نہ ہو تو روزمیری اور پودینے کے تیل سے بھی اسی طرح کے فائدے حاصل کئے جا سکتے ہیں

(Visited 345 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں