پولیس کبھی بھی عوام کی مدد کے بغیر کا میا ب نہیں ہو سکتی ، آئی جی اسلام آباد

Sultan Azam Temuri
Loading...

اسلام آباد:انسپکٹر جنرل آف پولیس اسلام آباد ڈاکٹر سلطان اعظم تیموری نے کہا شہر یو ں کے مسائل تر جیح بنیا دوں پر حل کر نے کے لیے کیمو نٹی پولیسنگ کو فروغ دیا جا رہا ہے

تا کہ عوام اور پولیس میں جو دوریاں ہیں ان کا خا تمہ ہو سکے ، پولیس کبھی بھی عوام کی مدد کے بغیر کا میا ب نہیں ہو سکتی ، انہو ں نے کہا کہ ہما ر ا وژن ہے کہ اسلام آ باد پولیس کو ایک مثالی فورس بنا یا جا ئے ، جس کے لیے ہمیں پا نچ بنیا دی اقدار پر عمل کر نا ہو گا ، ان پا نچ بنیا دی اقدار میں خدمت سے سر شار ہو نا ،عوام دوست ہو نا ، پر و فیشنل ہو نا ، قانو ن کا بر ابر اطلاق کرنا اور کر پشن فری ہو نا شامل ہیں ، انہو ں نے کہا کہ ہم عوام کے خا دم ہیں اور عوام کے ٹیکس سے تنخو اہ لیتے ہیں اور ہمیں عوام کی خدمت کرنا ہے، کر پشن کسی صورت بر داشت نہیں کی جا ئے گی ، اس کے لیے زیر و ٹا لرنس کی پا لیسی اپنا ئی جا ئے گی ، یہ با تیں انہو ں نے تھانہ سبز ی منڈی میں مصالحتی کمیٹی ، نیبر ہوڈواچ کمیٹی ، تاجر کیمو نٹی سے خطاب کے دوران کیں۔ اس موقع پر ایس پی انڈ سٹر یل ایر یا زون لیا قت حیا ت نیازی ،ایس ڈی پی او انڈ سٹر یل ایر یا رانا عبد الو ہا ب،ایس ایچ او سبزی منڈی انسپکٹر اسجد محمود کے علاوہ دیگر پولیس افسران و جوان بھی موجود تھے ، اس مو قع پر آئی جی اسلام آ باد نے خطا ب کر تے ہو ئے کہا کہ آج کے دور میں اگر پولیسنگ کا کوئی کامیاب طریقہ ہے تو وہ کمیونٹی پولیسنگ کا ہے ۔

پوری دنیا میں یہ مانا جاتا ہے کہ کمیونٹی پولیسنگ،پولیسنگ کا ایک بہترین ماڈل ہے اور تمام ترقی یافتہ ممالک کمیونٹی پولیسنگ کو مانتے ہیں ۔آج کل کے زمانے میں پولیس علیحدگی میں کام نہیں کر سکتی جب تک عوام کے ساتھ مل کر کام نہ کرے اس کے لئے کامیابی ممکن نہیں ۔اس کی وجہ ہمارا کسٹمر عوام ہی ہے اور اگر کمیونٹی ہی ہم سے خوش نہ ہو ،اس کا پولیس پر اعتبار یا اعتماد نہ ہو ،پولیس سے متنفر ہو تو ہم جو مرضی کر لیں کامیاب نہیں ہو سکتے ۔پولیس کا ایک مائنڈ سیٹ بن چکا ہے کہ وہ عوام سے بھاگتے ہیں حالانکہ پولیسنگ کا مقصد عوام ہے جس کو ہم نے ریلیف دینا ہے ،جن کی زندگیوں کو ہم نے آسان کرنا ہے اگر انہیں سے ہم بھاگیں تو اس پولیسنگ کا کوئی مقصد نہیں ۔کمیونٹی پولیسنگ کے تین حصے ہیں پہلا حصہ کہ آپ نے کمیونٹی سے ملنا ہے ان سے بات چیت کرنی ہے اور سب سے پہلے اپنا ہاتھ کمیونٹی کی طرف بڑھانا ہے ۔دوسرے حصے میں کمیونٹی اپنے مسائل آپ کو بتاتی ہے اور تیسرے نمبر پر آپ کمیونٹی کے ساتھ مل کر ان مسائل کا حل تلاش کرتے ہیں بلکہ اکٹھے ہو کر ان کو حل کرتے ہیں اور آپ نے یہاں سے جاتے ہیں ان تینوں حصوں کو مرحلہ وار اپنانا ہے ۔آپ لوگوں کے اندر سے اس وردی کا ڈر ختم کرنا ہے ۔

آپ نے کوالٹی کمیونٹی کنٹیکٹ پر عمل کرنا ہے کہ آپ اس طرح کسی آدمی سے ملیں کہ وہ آپ کو بھولنا بھی چاہے تو نہ بھول سکے ۔اور جب بھی کسی آدمی سے بات کریں تو مختصر وقت میں اس کو اعتماد میں لیں۔ انہو ں نے کہا کہ 99فیصد مسائل تھا نوں سے متعلق ہو تے ہیں ، اسلام آ باد پولیس اس سلسلہ میں خصوصی اقداما ت اٹھا رہی ہے ، 22پولیس اسٹیشنز ز میں عوام اور پولیس مل کر کا م کر یں گے تو لو گو ں کو فوری ریلیف ملے گا،انہو ں نے کہا کہ عوام النا س زیا د ہ سے زیا دہ پولیس سے رابطہ رکھیں اور معلو ما ت شیئر کر یں اپنے ارد گر د کے ما حو ل پر نظر ر کھیں اور اگر کو مشکو ک سر گر می نظر آ ئے تو پولیس کو بر وقت اطلا ع دیں ایسے لو گو ں کا نا م مکمل صیغہ راز میں رکھا جا ئے گا ، آئی جی اسلام آ باد نے کمیٹیو ں کے ممبر ان سے بھر پو ر تعاون کی اپیل کی ہے ، جس پر تما م شہر یو ں نے بھر پو ر تعاون کو یقین دلا یا ۔

Loading...

انہو ں نے کہا کہ ہما ری زندگی کا مقصد دوسروں کی مدد کر نا ہے ، آئی جی اسلام آ باد نے کہا کہ کیمو نٹی پولیسنگ کے فروغ اور شہر یو ں کے جا ن و ما ل کے تحفظ کے لیے آ گا ہی مہم ، میڈیکل کیمپس کا انعقاد اور صحت سے متعلق واکس کا اہتما م کیا جا رہا ہے ، انہو ں نے کہا کہ کیمو نٹی پولیسنگ کو زیادہ سے زیا دہ فروغ دیں لو گو ں کو اپنے سا تھ شامل کر یں تا کہ عوام اور پولیس کی جو دوریاں ہیں ان کا خاتمہ کیا جا سکے او ر اس طرح لو گو ں کے مسائل کا زیا دہ سے زیا دہ ازالہ ممکن ہو سکتا ہے ، آئی جی اسلام آ باد نے کہا کہ ہما ر ا وژن ہے کہ اسلام آ باد پولیس کو ایک مثالی فورس بنا یا جا ئے ، جس کے لیے ہمیں پا نچ بنیا دی اقدار پر عمل کر نا ہو گا ، ان پا نچ بنیا دی اقدار میں خدمت سے سر شار ہو نا ،عوام دوست ہو نا ، پر و فیشنل ہو نا ، قانو ن کا بر ابر اطلاق کرنا اور کر پشن فری ہو نا شامل ہیں ،

انہو ں نے کہا کہ ہم عوام کے خا دم ہیں اور عوام کے ٹیکس سے تنخو اہ لیتے ہیں اور ہمیں عوام کی خدمت کرنا ہے، کر پشن کسی صورت بر داشت نہیں کی جا ئے گی ، اس کے لیے زیر و ٹا لرنس کی پا لیسی اپنا ئی جا ئیگی ، آئی جی اسلام آ باد نے کہا کہ کیمو نٹی پولیسنگ کیلئے پولیس اور کیمو نٹی کو مل کر کا م کر نا ہو گا جس پر تما م ممبر ان ان با تو ں پر اتفا ق کر تے ہو ئے لو کل پولیس کو مکمل تعاون کی یقینی دہا نی کر ائی ، تما م ممبر ان نے آئی جی اسلام آ باد کے اس بہتر ین اقدام کو سراہا اور اس میں بہتر ی اور کیمونٹی پولیسنگ کو اجا گر کر نے کے لیے اپنی اپنی تجا ویز دیں اور پولیس کیے گئے اقداما ت کی تعریف کی ۔

(Visited 52 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں